کراچی (اسٹاف رپورٹر) دعوت اسلامی کے امیر علامہ مولانا محمد الیاس عطار قادری نے کہا ہے کہ مسلمان کی سب سے قیمتی چیز اس کا ایمان ہے اور یہ حقیقت ہے کہ جس چیز کی قدر زیادہ ہوگی اتنی ہی اس کی حفاظت کی جائے گی چنانچہ ایمان سب سے زیادہ قیمتی ہے لہٰذا ہمیں اس کی حفاظت کا ذہن بنانا چاہئے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے دعوت اسلامی کے عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ میں پنجاب سے تعلق رکھنے والے ایم این اے، وکلاء اور تاجروں کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔ امیر اہل سنت نے کہا کہ نجات ایمان پر خاتمے کے ساتھ مشروط ہے۔ ہم میں سے کوئی یہ نہیں جانتا کہ ہمارا خاتمہ ایمان پر ہی ہوگا اللہ عزوجل کی خفیہ تدبیر ہمارے بارے میں کیا ہے اس سے ہم ناواقف ہیں یہی سب سے بڑی خوف کی بات ہے کیونکہ پُل صراط کا معاملہ بڑا ہی نازک ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں چاہے کوئی کتنا ہی عیش و عشرت کی زندگی گزار لے مگر موت تمام تر لذتوں کو ختم کرکے ہی رہے گی۔ مگر اس سے قبل موت کا مرحلہ بھی انتہائی کربناک ہے نجانے کیسے کیسے وزیروں، مشیروں و افسروں کو موت نے ان کے بنگلوں اور عالیشان کوٹھیوں کی وسعتوں اور چکا چوند روشنیوں سے قبر کی تنگی اور تاریکیوں میں منتقل کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے دنیاوی محبت کو خوف خدا پر فوقیت دیدی ہے۔ ہم تباہی و بربادی کی طرف جارہے ہیں اگر ہمیں دنیا و آخرت میں سرخرو ہونا ہے تو اللہ عزوجل کا خوف اپنے دلوں میں پیدا کرناہوگا ہمیں اگر حقیقی معنوں میں کامیابی حاصل کرنی ہے تو محبت رسول اپنے دلوں میں پیدا کرکے اپنی زندگی کو سنتوں کا عملی نمونہ بنانا ہوگا۔ امیر اہلسنت نے وفد سے کہا کہ موت کی تیاری قبر و حشر اور پُل صراط سے گزرنے کی آسانی کے حصول کی تڑپ اپنے اندر پیدا کرنے کیلئے دعوت اسلامی کے پاکیزہ ماحول سے وابستہ رہنے اور مدنی قافلوں میں سفر کو اپنا معمول بنائیے۔