بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

ثُمَّ قَسَتۡ قُلُوۡبُكُمۡ مِّنۡۢ بَعۡدِ ذٰلِكَ فَهِىَ كَالۡحِجَارَةِ اَوۡ اَشَدُّ قَسۡوَةً ‌ ؕ وَاِنَّ مِنَ الۡحِجَارَةِ لَمَا يَتَفَجَّرُ مِنۡهُ الۡاَنۡهٰرُ‌ؕ وَاِنَّ مِنۡهَا لَمَا يَشَّقَّقُ فَيَخۡرُجُ مِنۡهُ الۡمَآءُ‌ؕ وَاِنَّ مِنۡهَا لَمَا يَهۡبِطُ مِنۡ خَشۡيَةِ اللّٰهِ‌ؕ وَمَا اللّٰهُ بِغَافِلٍ عَمَّا تَعۡمَلُوۡنَ

پھر اس کے بعد تمہارے دل سخت ہوگئے سو وہ پتھروں کی طرح بلکہ ان سے بھی زیادہ سخت ہیں ‘ اور بیشک بعض پتھروں سے دریا پھوٹ پڑتے ہیں ‘ اور بیشک بعض پتھر پھٹتے ہیں تو ان سے پانی نکل آتا ہے ‘ اور بیشک بعض پتھر اللہ کے خوف سے گرپڑتے ہیں۔ اور اللہ تعالیٰ تمہارے کاموں سے غافل نہیں ہے

[Tibyan-ul-Quran 2:74]