بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَدَّ کَثِيۡرٌ مِّنۡ اَهۡلِ الۡكِتٰبِ لَوۡ يَرُدُّوۡنَكُمۡ مِّنۡۢ بَعۡدِ اِيۡمَانِكُمۡ كُفَّارًا ۖۚ حَسَدًا مِّنۡ عِنۡدِ اَنۡفُسِهِمۡ مِّنۡۢ بَعۡدِ مَا تَبَيَّنَ لَهُمُ الۡحَـقُّ‌ ۚ فَاعۡفُوۡا وَاصۡفَحُوۡا حَتّٰى يَاۡتِىَ اللّٰهُ بِاَمۡرِهٖ ‌ؕ اِنَّ اللّٰهَ عَلٰى کُلِّ شَىۡءٍ قَدِيۡرٌ

بہت سے اہل کتاب نے ان پر حق واضح ہوجانے کے باوجود اپنے حسد کی وجہ سے یہ چاہا کہ کاش وہ ایمان کے بعد تم کو پھر کفر کی طرف لوٹا دیں سو تم (ان کو) معاف کرو اور درگزر کرو حتی کہ اللہ اپنا (کوئی اور) حکم صادر فرمائے بیشک اللہ ہر چیز پر قادر ہے

القرآن – سورۃ 2 – البقرة – آیت 109