حدیث نمبر :46

انہیں سے روایت ہے کہ انہوں نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے کامل ایمان کے متعلق ۱؎ پوچھافرمایا یہ ہے کہ تم اﷲ کے لئے محبت و عداوت کرو اور اپنی زبان کو اﷲ کے ذکر میں مشغول رکھو ۲؎ عرض کیا اور کیا یارسول اﷲ؟ فرمایا کہ لوگوں کے لئے وہ ہی پسند کرو جو اپنے لئے چاہتے ہو اور ان کے لئے وہ ناپسند کرو جو اپنے لئے ناپسند کرتے ہو۔(احمد)

شرح

۱؎ یعنی مؤمن کا کون سا حال اور کونسی خصلت بہتر ہے جیسا کہ جواب سے معلوم ہورہا ہے۔

۲؎ تاکہ ذکر کی برکت زبان تک پہنچے اور اس سے ایمان کی قوت حاصل ہو جو زبان ذکر اﷲ سے تر رہے گی۔وہ ان شاء اﷲ دوزخ کی آگ سے نہ جلے گی۔