آداب مجلس کا بیان

اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں ارشاد فرمایاکہ

’’یایھا الذین آمنوا اذا قیل لکم تفسحوا فی المجلس فافسحوا یفسح اللہ لکم واذا قیل انشزوا فانشزوا یرفع اللہ الذین اٰمنوامنکم والذین اوتوا العلم درجات‘‘۔ (پارہ ۲۷؍رکوع ۲)

ترجمہ:۔اے ایمان والو! جب تم سے کہا جائے مجلسوں میں جگہ دے دو تو تم لوگ جگہ دے دو ۔اللہ تعالیٰ تم کوجگہ دے گا اور جب تم سے کہا جائے کہ اٹھ کھڑے ہو تو اٹھ کھڑے ہوجائو ۔ اللہ تم میں علم والوں اور ایمان والوں کے درجات کو بلند فرمادے گا۔

رسول اللہﷺ نے ارشاد فرمایا کہ کوئی شخص ایسا نہ کرے کہ مجلس سے کسی کو اٹھا کر خود اس کی جگہ پر بیٹھ جائے بلکہ آنے والے کے لئے ہٹ جائے اور جگہ کشادہ کردے۔ (بخاری وغیرہ)

مجلسوں میں ہر مرد وعروت کو ان چند آداب کا لحاظ رکھنا چاہیے۔

۱) کسی کو اس کی جگہ سے اٹھا کر خود وہاں مت بیٹھو۔ (ابودائود )

۲) کوئی مجلس سے اٹھ کر کسی کام کو گیا اور یہ معلوم ہے کہ وہ ابھی آئے گا تو ایسی صورت میں اس جگہ کسی کو بیٹھنا نہیں چاہییٔ وہ جگہ اسی کا حق ہے۔ (ابو دائود ج۲؍ص۳۱۶)

۳)ا گر دو شخص مجلس میں پاس پاس بیٹھ کر باتیں کر رہے ہوں تو ان دونوں کے بیچ میں جاکر نہیں بیٹھ جانا چاہییٔ ۔ہاں البتہ وہ دونوں اپنی خوشی سے تمہیں اپنے درمیان میں بٹھائیں تو بیٹھنے میں کوئی حرج نہیں۔ (ابودائود ج۲؍ص۳۱۷)

۴)جو تم سے ملاقات کے لئے آئے تو تم خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ا س کے لئے ذرا اپنی جگہ سے کھسک جائو جس سے وہ یہ جانے کہ میری قدر وعزت کی ۔

۵)مجلس میں سردار بن کر مت بیٹھو بلکہ جہاں بھی جگہ ملے بیٹھ جائو ۔ گھمنڈ اور غرور اللہ تعالیٰ کو بے حدنا پسند ہے اور تواضع وانکساری اللہ تعالیٰ کو بہت محبوب ہے ۔

۶)مجلس میں چھینک آئے تو اپنے منھ پر اپنا ہاتھ یا کوئی کپڑا رکھ لو اور پست آواز سے چھینکواور بلند آواز سے ’’ اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ‘‘ کہواور حاضرین مجلس جواب میں ’’ یَرْحَمُکَ اللّٰہُ‘‘ کہیں۔

۷)جمائی کو جہاں تک ہو سکے روکو،اگر پھر بھی نہ رکے تو ہاتھ یا کپڑے سے منھ ڈھانک لو۔

۸)بہت زور سے قہقہہ لگا کر مت ہنسو کہ اس طرح ہنسنے سے دل مردہ ہوجاتا ہے۔

۹)مجلسوں میں لوگوں کے سامنے تیوری چڑھا کر اور ماتھے پر بل ڈال کر ناک چڑھا کر مت بیٹھو کہ یہ گھمنڈی لوگوں اور متکبروں کا طریقہ ہے بلکہ نہایت عاجزانہ انداز سے غریبوں کی طرح بیٹھو کوئی بات موقع کی ہو تو لوگوںسے بول چال بھی لو ۔لیکن ہر گز ہرگز کسی کی بات مت کاٹو،نہ کسی کی دل آزاری کرو،نہ کوئی گناہ کی بات بولو۔

۱۰)مجلس میں خبردار خبردار کسی کی طرف پائوں نہ پھیلائوکہ یہ بالکل ہی خلاف ادب ہے۔

مجلس سے اٹھتے وقت کی دعا

تاجدار مدینہ ،سرور قلب و سینہ ارواحنا فداہ ا نے فرمایا کہ جو شخص مجلس سے اٹھ کر تین مرتبہ یہ دعا پڑھ لے گا ۔اللہ تعالیٰ اس کے گناہوں کو مٹا دے گا اور جو شخص مجلس خیر اور مجلس ذکر میں اس دعا کو پڑھے گا ۔اللہ تعالیٰ اس کے لئے اس خیر پر مہر کردے گا ۔

(ابودائود ج۲؍ص۳۱۹مجتبائی)

سُبْحَانَکَ اللّٰہُمَّ وَبِحَمْدِکَ لَااِلٰہَ اِلّاَ اَنْتَ اَسْتَغْفِرُکَ وَاَتُوْبُ اِلَیْکَ۔

ترجمہ:۔اے اللہ ! ہم تیری تعریف کے ساتھ تیر ی پاکی بیان کرتے ہیں،تیرے سوا کوئی معبود نہیں میں تجھ سے بخشش مانگتا ہوں اور تیرے دربار میں توبہ کرتا ہوں۔