اب تک کی بہترین بات۔

سوچتا ہوں کہ دجال کے دور میں کیا حال ہو گا۔۔

————————————————————–

تحریک لبیک پاکستان کے امیر خادم حسین رضوی کے حوالے، میرے بہت سے تحفظات ہیں۔ لیکن حرمت رسول پر ان کے انتہائی “بولڈ سٹانس” کا میں معترف ہوں۔

ان کی گرفتاری پر بہت کچھ لکھنے کو جی کر رہا ہے، لیکن فی الوقت اس واقعے پر ہی اکتفا کیا ہے

گیتا ہری ہرن نے اپنے ناول In Times Of Siege میں ایک جرمن پادری “مارٹن نیمولر” کا حوالہ دیا ہے جسے جرمن نازیوں نے سزائے موت دے دی تھی۔

“پادری کہتا ہے کہ نازی جرمنی میں، پہلے کیمونسٹوں کے خلاف حرکت میں آئے۔ میں نے آواز نہیں اٹھائی، کیونکہ میں کیمونسٹ نہیں تھا۔

پھر انہوں نے یہودیوں کے خلاف اقدام کیا۔ میں نے آواز نہیں اٹھائی، کیونکہ میں یہودی نہیں تھا.

پھر انہوں نے ٹریڈ یونینوں کا قلع قمع کیا۔ میں نے آواز نہیں اٹھائی، کیونکہ میں ٹریڈ یونینسٹ نہیں تھا۔

پھر انہوں نے “رومن کیتھولکس” پر ظلم وستم کئے۔ میں نے آواز نہیں اٹھائی، کیونکہ میں پروٹسٹنٹ عیسائی تھا.

پھر انہوں نے میرا رخ کیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر اس وقت کوئی بچا ہی نہیں تھا جو

میرے لئے آواز اٹھاتا۔” 😓😭😡😠

بشکریہ رضوان اللہ جیلانی