میری سوچ بھی مجرم ہے

امریکا نے جاپان کے شہر ہیروشیما اور ناگاساکی میں ایٹم بم گرایا جس نے دیکھتے ہی دیکھتے 2 سے 3 لاکھ کے درمیان لوگوں کی جان لے لی۔

مگر پاکستانی دہشتگرد ہیں

روس نے افغانستان میں 1979ء سے لے کر 1989ء تک 15 لاکھ سے زائد لوگوں کو قتل کیا.

ہاں لیکن مسلمان دہشت گرد ہیں

امریکا 2011ء سے لے کر آج تک افغانستان میں سات لاکھ سے زائد لوگوں کو قتل کر چکا ہے.

مگر پھر بھی مسلمان دہشت گرد ہیں.

اسرائیل فلسطین کو کچا چبا گیا. صدیوں سے پہچان رکھنے والا فلسطین آج اپنا وجود کھو بیٹھا ہے.

مگر مسلمانوں تم تو دہشتگرد ہو

تمہارے سامنے ہی ہے عراق کو امن کی سرزمین بنا دیا امریکہ نے…

مسلمانوں تم تو دہشتگرد ہو.

لبنان بھی امریکہ کی وجہ سے امن کا گہوارہ بنا ہے.

مسلمانوں تم تو دہشتگرد ہو

امریکہ کے آنے سے آج لیبیا کتنا خوش حال ہے.

مسلمان تو ہے ہی دہشتگرد.

انڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں 7 لاکھ فوج کے ساتھ بہنوں بیٹیوں کی عزتوں سے کھیلتے ہوئے نوجوانوں کی نسل کشی کرتے ہوئے ستر سال گزار دیئے.

مسلمان پھر بھی دہشتگرد ہے.

اگر ایران میں امریکہ کی تشریف آوری ہوتی تو وہ بھی آج اس حال میں نہ ہوتا وہ بھی پرامن ہوتا.

مسلمانوں تم دہشتگرد ہو.

پاکستان نے 40 لاکھ افغانیوں کو اپنے ملک میں سالہا سال تک پناہ دی ان کو روزگار کے مواقع دیئے اپنی معیشت کو تباہ کروایا.

مگر پاکستانی پھر بھی دہشتگرد ہے.

میرے وطن عزیز نے بھی ستر ہزار سے زائد جانوں کی قربانی دی آرمی کے نوجوانوں کے ساتھ.

میرا حکمران نہیں سمجھ پایا کہ جنگ میری تھی میرے وطن کی تھی یا ہم نے کسی اور کی جنگ لڑی..

عالمی طاقتیں ابھی ناراض ہیں کہ ہم نے تیری گال پر تھپڑ مارا ہے تم نے دوسری گال آگے کیوں نہیں کی ہم تیرے گھر میں آئے ہیں تو ہماری بمباری سے ناراض کیوں ہے.

کیا تجھے پتہ نہیں اسلام امن کا درس دیتا ہے

میں کیا دنیا کا رونا لے کر بیٹھ گیا مجھے تو اپنے ملک کی بات کرنی ہے.

انصاف کی میرے ملک کو ضرورت ہے فیصلے ہمارے اداروں نے کرنے ہیں.

9.32 million pounds

آسیہ بی بی کیس میں صرف ایک انگلینڈ خرچ کر رہا ہے. انصاف کے لیے یا انصاف خریدنے کے لئے..

مگر پاکستان کا وہ طبقہ جو یہ کہتا ہے کہ انصاف کرو عدالتو انصاف دو،

ملک کے سب سے بڑے سپریم ادارے سے کہتا ہے انصاف کرو .. اے سپریم کورٹ انصاف کرو.

نہیں جو انصاف مانگے اس کو جیلوں میں ڈال دو.

جو انصاف مانگے اس پر فسادی کا لیبل لگا دو.

اگر داڑھی والا ہے تو انصاف مانگے تو فسادی ہے فیض آباد دھرنے میں بیٹھا ہوں 8 جانیں دے کر بھی پتھر نہ اٹھائے وہ فسادی ہے.

اسلام آباد میں ایک جنازے پر لاکھوں لوگ جمع ہوں ایک پتہ نہ توڑیں وہ فسادی ہیں.

کچھ باتیں میں بھول گیا ہوں.

مجھ کو کبھی بھی یاد آتی نہیں.

ایک محترمہ بھی شہید ہوئی تھیں اس وطن میں شاید ٹرینیں جلا دی گئی تھیں. پٹرول پمپ جلا دیئے گئے تھے. وطن کی اینٹ سے اینٹ بجا دی گئی تھی مگر میں بھول گیا ہوں.

کراچی کو تباہ حال کرنا وہ بھی ایک سیاسی جماعت کے ہاتھوں میں بھول گیا ہوں.

مساجد میں بم دھماکے.

سکولوں کو لہو لہو کرنا.

بازاروں میں خون کی ہولی کھیلنا.

مزاروں پہ آئے زائرین کو دہشت گردی کانشانہ بنا دینا.

نہیں نہیں طالبان اچھے اور برے بھی ہوتے ہیں.

یہ کہنا ہے ہماری سرکاروں کا،

ہم اچھے طالبان سے بات کریں گے یہ کہنا ہے ہماری سرکاروں کا. ہم ان کو قومی دھارے میں لے کر آئیں گے،

نہیں مگر انصاف نہ مانگنا تمہیں ہم جیلوں میں ڈال دیں گے فسادی کا لیبل تم پر لگا دیں گے تمہارے 70 سال کے بوڑھوں کو بھی اٹھا کر جیلوں میں ڈال دیں گے انصاف نہ مانگنا

انصاف تو ہم نے ملین پونڈ کے بدلے میں کر دیا ہے..

تم نے دیکھا نہیں ہمارا چیف جسٹس انصاف کے حصول کے لئے انگلینڈ کے دھکے کھا رہا ہے…

انصاف تو ہو گیا ہے.

ابھی ہم تمہیں پھر سے طالبان بنائیں گے.

پھر تم جب پک کر بھٹی میں تیار ہو جاؤ گے.

پھر تمہاری طرف امن کا پیغام بھیجیں گے.

ابھی تم اس قابل نہیں ہو کہ تم سے بات کی جائے کیونکہ تم انصاف کی بات کرتے ہو.

ابھی انصاف کا مطالبہ حکومت وقت سے کرتے ہو ابھی تم سے بات کرنے کا وقت نہیں..

ہاں جب تم سڑکوں پہ انصاف خود کرو گے..

پھر تمہارا حق ہے کہ تم سے امن کی بات کی جائے ابھی وقت نہیں ہے ابھی وقت نہیں ہے.

میری سوچ بھی مجرم ہے. میری سوچ بھی مجرم ہے.

محمد یعقوب نقشبندی اٹلی