صحابہ کرام آپس میں دورہ ٔ حدیث کر تے تھے

حضرت انس بن مالک رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں : ہم لوگ حضور اقدس صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم کی زبان مبارک سے احادیث سنکر آپس میں دور کرتے ،ایک شخص بیان کرتا اور سب سنتے ،پھر دوسرے کی باری آتی اور پھر تیسراشخص سناتا ، بعض اوقات ساٹھ ساٹھ صحابہ کرام ایک مجلس میں اسی طرح آپس میں دور کیاکرتے تھے ،اسکے بعد جب مجلس سے اٹھتے توایسامحسوس ہوتاتھا کہ حدیثیں ہمارے قلوب واذہان میں بودی گئی ہیں ۔(فیوض الباری، مصنفہ مفتی محمود احمد رضوی، ۱/۲۰)

حضرت ابوسعید خدری رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں : صحابہ کرام کہیں بیٹھے ہوتے توانکی گفتگو کا موضوع فقہ یعنی حضور اقدس صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم کی حدیثیں ہوتی تھیں ،یاپھر یہکہ کوئی آدمی قرآن پاک کی کوئی سورۃ پڑھے یاکسی سے پڑھنے کو کہے ۔