بیچ میں آڑ نہ ہو تو وضو کرے

حدیث نمبر :307

اورحضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم سے روایت کی،حضور نے فرمایا جب تم میں سے کوئی اپنا ہاتھ عضو خاص تک پہنچائے کہ بیچ میں آڑ نہ ہو تو وضو کرے ۱؎ اسے شافعی اور دار قطنی نے روایت کیا۔اور نسائی نے حضرت بُسرہ سے مگر انہوں نے یہ ذکر نہ کیا کہ بیچ میں آڑ نہ ہو۔

شرح

۱؎ چونکہ صاحب مصابیح محی السنّہ اورصاحب مشکوٰۃ ولی الدین رحمۃ اﷲ علیہما شافعی ہیں۔اور یہ حدیث ان کے خلاف ہے۔اس لئے جواب پرمجبور ہوئے اورنسخ کے سوا اورکوئی جواب نہیں بن سکتا،کیونکہ یہ حدیث مطابق قیاس کے ہے اور پچھلی حدیث خلاف قیاس،لہذا ترجیح اس ہی حدیث کو ہوگی جو مطابق قیاس ہے۔اس لیے حضرت محی السنّہ نے نسخ کا دعویٰ فرمایا مگر نسخ کی روایت کوئی نہ ملی،صر ف اندازے سے منسوخ کہہ دیا،یعنی چونکہ حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کا اسلام پیچھے ہے اورطلق کی حاضری پہلے،لہذا طلق نے نہ ٹوٹنے کی حدیث پہلے سنی ہوگی اورحضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے وضو توڑنے والی حدیث بعد میں سنی ہوگی،اس لئے حدیث ابوہریرہ رضی اللہ عنہ ناسخ ہے اورحدیث طلق منسوخ۔ظاہرہے کہ یہ بات کتنی کمزور ہے۔اولًاتو اس لیے کہ ان دونوں حدیثوں میں تعارض نہیں،دونوں جمع ہوسکتی ہیں جیساکہ ہم عرض کرچکے،پھربلاوجہ ایک منسوخ کیوں مانا جائے۔دوسرے اس لئے کہ حضرت ابوہریرہ کے اسلام کے بعد حضرت طلق نہ تو فات پا گئے اور نہ بالکل غائب ہی ہوگئے بلکہ حضورصلی اللہ علیہ وسلم سے ملاقات کرتے رہے،تو ہوسکتا ہے کہ آپ نے یہ حدیث حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کے اسلام کے بہت عرصہ بعد سنی ہواورحضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے اپنی روایت پہلے سن لی ہو،حدیث طلق ناسخ ہو،ابوہریرہ منسوخ۔بہرحال یہ دعویٰ نسخ بلا دلیل ہے۔خیال رہے کہ حضرت طلق ہجرت کے سال مسجد نبوی شریف کی تعمیر کے وقت حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی بارگاہ میں حاضر ہوئے اورحضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ ۷ھ؁ خیبر کے سال اسلام لائے،نیز حضرت ابوہریرہ نے یہ نہیں فرمایا کہ میں نے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے سنا بلکہ حضور سے روایت کی۔ہوسکتا ہے کہ یہ حدیث طلق کی تشریف آواری سے بہت پہلے کسی اور صحابی نے سنی ہو،انہوں نے حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے بیان کی ہوجیسا کہ مُرسَلِ صحابہ میں ہوتا ہے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.