آئرش پارلیمنٹ کا عظیم فیصلہ

آئرش پارلیمنٹ کا عظیم فیصلہ

آج صبح جب ناشتے کے بعد اخبار کھولی تو یہ خبر پڑھ کر دل خوش ہوگیا کہ آئرلینڈ کی پارلیمنٹ نےاسرائیل کی مصنوعات پر پابندی کا بل کثرت رائے سے منظور کر لیا ہے.یہ خبر یقینا فلسطینی مسلمانوں اوردنیا بھر میں ان کی حمایت کرنے والوں کے لیے بڑی خبر ہے.بل کے حق میں 78 ووٹ پڑے جبکہ اسکی مخالفت میں 45 ووٹ آئے.یہ بل آئرلینڈ کے ایوان زیریں نے منظور کیا ہے.ایوان بالا تو دسمبر 2018 میں اسرائیلی مصنوعات پر پابندی کے حق میں پہلے ہی فیصلہ دے چکا ہے.اس وقت آئرش ایوان بالا کے ایک آزاد سینیٹرفرانس بلیک نے یہ بل پیش کیا تھا,بل کی منظوری کے بعد فرانس بلیک نے ٹویٹ کیا تھا کہ ہم ہمیشہ بین الاقوامی قانون اور انسانی حقوق کے ساتھ کھڑے ہیں اور ہم تاریخ رقم کرنےکےلیے ایک قدم کے فاصلے پر کھڑے ہیں.غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق یہ بل ایوان زیریں میں حزب اختلاف کی ایک بڑی جماعت ری پبلک پارٹی(فیانا فیل) کے سینٹرنیال کولنز نے پیش کیاجسے کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا.

جب ایوان بالا نے یہ بل منظور کیا تھا تو اس وقت امریکا ,یورپی طاقتوں اور اسرائیل نے اسکی شدید ترین مخالفت کی تھی.لیکن آئرلینڈ کے ایوان بالا نے اس مخالفت کی پرواہ کیے بغیر اسکو منظور کر لیا تھا.اب یہ بل مختلف مراحل سے گزر کر آئرش قانون کا حصہ بن جائے گا.جب یہ قانون کا حصہ بن گیا تو یقینا آئر لینڈ صیہونی ریاست اسرائیل کے قبیح اقدامات کو جرائم قرار دینے والا یورپی یونین کا پہلا ملک بن جائے گا.یہ ایک عظیم تاریخی فیصلہ ہے جس کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے.فلسطین کی نیشنل انیشی ایٹو پارٹی کے سیکرٹری جنرل مصطفی برغوتی نےاسے ایک عظیم فتح قرار دیا ہے.انہوں نے کہا کہ میں توقع کرتا ہوں کہ دیگر یورپی ممالک بھی ایسا کریں گے.اسرائیل کے وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہونے اسکی مذمت کی ہے اور اسرائیلی وزارت خارجہ نے آریش سفیرالیسن کیلی بل کی منظوری پر شدید احتجاج کیا ہے.

اب سوال یہ ہے کہ مسلمان حکومتیں بطور خاص عرب ممالک بھی آئرلینڈ کی تائید کریں گے? جواب یہ ہے کہ نہیں بالکل نہیں وہ ایسا نہیں کریں گے.انکی تنابیں امریکہ کے ہاتھ میں ہیں جو امریکہ کہے گا وہ وہی کچھ کریں گے.یہ امت کا اور اسلام کا المیہ ہے کہ اس کے فرزند فلسطین میں ظلم کا شکار ہیں اور اسلامی دنیاخاموش ہے یا اسرائیل کے ساتھ کھڑی ہے الاما شاء اللہ.

مفتی گلزار احمد نعیمی

آجمورخہ.27 جنوری 2019

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.