حضرت جابر بن عبداللہ کے صحیفے

حضرت جابر بن عبداللہ کے صحیفے

آپکی مرویات بھی کثیر تعداد میں ہیں اورانکی جمع وتدوین کی روداد کچھ اس طرح ہے ۔ امام طحاوی انکے شاگردوں کا قول لکھتے ہیں: ۔

کنانأتی جابر بن عبداللہ لنسألہ عن سنن رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم فنکتنبھا۔ (شرح معانی الآثار للطحاوی، ۲/۳۰۴)

ہم لوگ حضرت جابر بن عبداللہ رضی اللہ تعالیٰ عنہما کی خدمت میں حاضر ہوتے تاکہ حضور نبی کریم صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم کی سنتیں معلوم کرکے قلمبند کریں ۔

آپکی روایتوں کے متعدد مجموعوں کو ذکر ملتاہے ۔

ایک مجموعہ اسمعیل بن عبدالکریم کے پاس تھا۔(تہذیب التہذیب لا بن حجر، ۲/۲۰۶)

دوسرا سلیمان یشکری کے پاس ۔(تہذیب التہذیب لا بن حجر، ۲/۲۱۱)

ابوبکر عیاش نے امام اعمش سے اس زمانہ کے لوگوں کی رائے نقل کی ہے ۔

ان مجاہدایحدث عن صحیفۃ جابر۔ (الطبقات اکبری لا بن سعد، ۵/۲۴۴)

حضرت مجاہد حضرت جابر کے صحیفہ سے روایت بیان کرتے تھے ۔

ایک صحیفہ حضرت جابرکے پاس اورتھا جسکو تابعی جلیل حضرت قتادہ بن دعامہ سدوسی بہت اہمیت دیتے تھے ۔ فرماتے تھے : مجھے سورۃ بقرہ کے مقابلہ میں صحیفہ جابر زیادہ حفظ ہے ۔(التاریخ الکبیر للبخاری)

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.