ناصبی فرقے کے باطل عقائد و نظریات

دیگر فتنوں اورفرقوں کی طرح ناصبی فرقہ بھی منظر عام پر آیا یہ فرقہ بھی گمراہ ہے اس فرقے کی بیماری یہ ہے کہ یہ اپنے جلسوں اور اپنے لٹر یچر کے ذریعہ خبا ثتیں پھیلاتے ہیں اس فرقے کے کچھ بنیادی نظریات ہے یہ لوگ عوام لنّاس میں خاموشی سے داخل ہوجاتے ہیں اس فرقے کی کوئی بڑی تعداد نہیں ہے چند بنیاد پرست اور اپنے نام اور اپنی ناک کو اونچا رکھنے کے لئے جاہل مولوی اس فتنے کو فروغ دیتے رہے ہیں ۔

ان کے گمراہ کن عقائد یہ ہیں

عقیدہ :اہلبیت اطہار سے حسد رکھنا۔

عقیدہ :اہلبیت اطہار کی شان گھٹانے کی ناکام کوشش میں حضرات صحابہ کرام علیہم الرضوان کا نام استعمال کرنا ۔

عقیدہ :حضرت علی رضی اللہ عنہ سے مکمل بغض و عداوت رکھنا جنگِ جمل کو آڑ بنا کر حضرت علی رضی اللہ عنہ

کی ذات پر تبرّا کرنا ۔

عقیدہ :واقعہ کر بلا رونما ہونے کا مکمل انکار کرنا بلکہ یہ کہہ دینا کہ اہلبیت اطہار کا قافلہ جارہا تھا راستے میں ڈاکوؤں نے لوٹ لیا یعنی واقعہ کربلاکو مَن گھڑت کہنا ۔

عقیدہ :حضرت امامِ حسین رضی اللہ عنہ پر الزام لگا نا کہ آپ رضی اللہ عنہ کر سی اورحکومت کے لئے کربلا گئے ۔

عقیدہ :حضرت امامِ حسین رضی اللہ عنہ پر الزام لگا نا کہ آپ رضی اللہ عنہ مدینے سے کربلا گئے کیوں نہ وہ جاتے نہ یہ واقعہ ہوتا ۔

عقیدہ :حضرت امامِ حسین رضی اللہ عنہ پر یزید کو فوقیت دینا۔

عقیدہ :یزید کو حضرت یزید رضی اللہ عنہ اور امیر المومنین کہنا ۔

عقیدہ : یزید کوجنّتی کہنا ۔

عقیدہ :حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا پر طعنہ زنی کرنا ۔

عقیدہ :ـسر کار ﷺکی کچھ ازواج مطہرات پر بیہو دہ الزامات لگانا ۔

یہ عقائد رکھ کر قوم میں ایک انتشار پید ا کرنا ناصبی فرقے کا اہم مقصد ہے جس میں مولوی شاہ بلیغ الدین کا اہم کردار ہے موجودہ دور میں اس بلیغ الدین نے اپنی تقریر وں کے ذریعہ اھلبیت سے مکمل عداوت کا ثبوت دیا حکومت پاکستان نے اس کی کئی تقاریر پر پابندی بھی عائد کی اور اس پر بھی پابندی لگادی ۔

بلیغ الدین کی کیسٹ ہمارے ریکارڈ میں موجود ہے یہ جلسے میں موجود عوام سے امیر المومنین یزید کا نعرہ لگواتا تھا ۔ناصبی فرقہ بھی گمراہ فرقہ ہے اس سے بھی بچناچاہئیے ۔

٭٭٭٭٭