حدیث نمبر :346

روایت ہے امیمہ بنت رقیقہ سے ۱؎ فرماتی ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس لکڑی کا پیالہ تھا جو آپ کے تخت کے نیچے رکھا رہتا تھا جس میں رات کو پیشاب کرتے تھے ۲؎(ابوداؤد،نسائی)

شرح

۱؎ آپ صحابیہ ہیں،آپ کے والد کا نام عبداﷲ اور ماں کا نام رقیقہ ہے،یا حضور کی پھوپھی ہیں یعنی آپ کے والد کی ماں شریکی ہمشیرہ یا حضرت خدیجہ رضی اللہ عنھا کی بہن،اور ہوسکتا ہے کہ یہ دونوں رشتے ہوں۔

۲؎ عید ان یا عود کی جمع ہے۔(بمعنی لکڑی)یا عیدانیۃٌ کی،بمعنی درخت کھجور۔سرکار اکثر زمین پرسوتے تھے(صلی اللہ علیہ وسلم)اور کبھی تخت پر بھی،پائنتی کی طرف یہ پیالہ رہتا تھا تاکہ پیشاب کے لیے سردی وغیرہ میں باہر نہ جانا پڑے۔