70 سال مین پہلی بار

*#انتہائی اہم فتوی#ٰ*

*دارالافتاء جامعہ نعیمیہ* کی طرف سے فتویٰ دیا گیا ہے کہ پاکستان کے تعلیمی نصاب میں ایک روایت *رسول اللّٰہ ﷺ* کی طرف منسوب کی جاتی ہے کہ “ایک بڑھیا رسول اللّٰہ ﷺ پر کوڑا کرکٹ پھینکتی تھی ، جب وہ بیمار ہو گئی تو رسول اللّٰہ ﷺ اس کی عیادت کہ لیے گئے” ۔ یہ روایت من گھڑت اور جھوٹ پر مبنی ہے ۔ ایسی کوئی روایت حدیث کی مستند کتابوں سے نہیں ملی اور نہ کسی فقیہ یا محدث نے اپنی کسی کتاب میں اس روایت کو نقل کیا ۔ یہ کئی سالوں سے عوام الناس میں جھوٹ پھیلایا جا رہا ہے ۔ یاد رہے یہ روایت سرے سے ہی غلط ہے ۔ اس لیے تمام دوست اپنی اصلاح فرمائیں اور جہاں تک ہو سکے اس فتویٰ کو پہنچائیں ۔۔۔ *شکریہ*