_*دھرتی ماں کا یہ روپ ؟*_

✒ از قلم شیخ الحدیث حضرت مولانا مفتی خالد محمود صاحب مہتمم ادارہ معارف القران کشمیر کالونی کراچی

ارشاد باری تعالی ہے ۔

🌹 يَوْمَئِذٍ تُحَدِّثُ أَخْبَارَهَا (4) بِأَنَّ رَبَّكَ أَوْحَىٰ لَهَا ۔

(5 سورة الزلزال )

🌄 جس روز یہ زمین ( اوپر ، اندر کی ) اپنی ساری خبریں دے گی کہ اس کے رب نے اسے کہہ دیا ہے ۔

☘ حضرت سیدنا أبو هريرة رضی اللہ عنہ کا قول ہے کہ :

رسول الله صلى الله عليه وسلم نے یہ آیت تلاوت فرمائی :

( يومئذ تحدث أخبارها )

تو فرمایا :

” أتدرون ما أخبارها ؟ “

کیا تمہیں معلوم ہے کہ اس کی خبریں کیا ہیں ؟

صحابہ کرام نے عرض کیا :

🌻 الله ورسوله أعلم .

فرمایا :

” 🌻 فإن أخبارها أن تشهد على كل عبد وأمة بما عمل على ظهرها ، أن تقول : عمل كذا وكذا ، يوم كذا وكذا ، فهذه أخبارها ” .

📗 مسند أحمد و سنن الترمذي و سنن النسائي اور متعدد تفاسیر ۔

🌻 تو یقینا اس کی خبریں دینے کا مطلب ہے کہ یہ زمین ہر مرد اور عورت کے بارے میں گواہی دے گی جو اس نے اس کی سطح پر کیا تھا ۔ بولے گی فلاں دن فلاں وقت میرے اوپر اس نے یہ بھی کیا ، یہ بھی کیا “

☘ جناب سیدنا ربيعة الجرشي رضى الله تعالى عنه و ارضاه عنا سے مروی ارشاد رسول الله صلى الله عليه وسلم ہے :

🌻 (( استقيموا ونعما إن استقمتم وحافظوا على الوضوء فإن خير أعمالكم الصلاة وتحفظوا من الأرض فإنها أمكم وإنه ليس أحد عامل عليها خيراً أو شراً إلا وهي مخبرة به ))

📗 سنن ابن ماجہ ، سنن البیھقی ، مسند احمد ، معجم طبرانی ،

🌻 سیدھے اور ثابت قدم رہو ۔ بہت ہی اچھا ہے کہ تم ( مقدور بھر ) سیدھے اور ثابت قدم رہو ۔ وضوء کی حفاظت کرو ۔بالیقین تمہارا سب سے اچھا عمل نماز ہے ۔ اور زمین سے بچ بچا کے رہو ۔ بلا شبہ یہ تمہاری ماں ( اصل ) ہے ۔ اور اس کی سطح پر کوئی بھی اچھا یا برا کام کرنے والا نہیں مگر یہ اس کام کی اسے خبر کرے گی ۔

🔎 فقیر خالد محمود کہتا ہے کہ پنجابی کی ایک کہاوت ہے کہ آپ کی کوئی حرکت آپ کی ماں سے پوشیدہ رہ نہیں سکتی ۔

یہ الگ بات ہے کہ ممتا کے تقاضے کے پیش نظر بھولی شی بنی رہتی ہے ۔

اور یہ بھی پتہ چلا کہ ہماری بصیرت و بصارت اور ادراک و وجدان سے ما ورآء حقائق بھی ہیں ۔ زمین سب کچھ بتا دے گی اور حوالوں و شہادتوں کے ساتھ بتائے گی ۔

تو اے کاش اس غیب پر ہمارا ابھی کما حقہ ایمان ہو جائے اور عمل صالح نصیب رہے تاکہ کل جب یہ عکس بندی اور شہادتیں سر عام علی الاعلان نشر ہونے لگیں تو ہم حسرت و ندامت کا شکار ہونے کے بجائے سب کو بلا بلا کر کہیں

هَاؤُمُ اقْرَءُوا كِتَابِيَهْ ( سورة الحاقة 19)

آؤ آؤ، سب پڑھو میرا اعمال نامہ ۔

اپنے رب کو ملنا میرا عقیدہ تھا سو جا رہا ہوں شرف دیدار کے لیئے ۔

آمین آمین آمین یا رب العالمین