قرآن مجید نے ویمن ڈے کے لیے ظالمین عورت ( عورتوں پر ظلم کرنے والوں )کے سامنےکونسے نعرے لگائے؟

جواب أز ابن طفیل الأزہری ( محمد علی ):

قرآن مجید نے عورتوں پر ہونے والے ظلم کے خلاف ویمن ڈے کے لیے پوری سورت کو نازل کیا جسکو سورہ نساء ( عورتوں کے حقوق میں سورت ) کہتے ہیں،

قرآن نے بہت سے نعرے لگائے جن میں سے ہم کچھ ذکر کرتے ہیں ، أور ترجمہ مفہوما کریں گے.

لہذا

أگر عورت کے حقوق کے لیے ریلی ہوتی تو نعرے یوں ہوتے جو قرآن کریم نے عورتوں پر ظلم کرنے والوں کے سامنے لگائے:

نعرہ نمبر 1 :

عورتوں کو اتنی ہی ذمہ داری دو جتنے أنکے حقوق ہیں ،

أس سے بڑھ کر اس پر ظلم نہ کرو:

لهن مثل الذي عليهن بالمعروف / عورت کے فرائض و حقوق میں مماثلت پیدا کرو.

نعرہ نمبر 2 :

عورتوں کو أسی قدر أچھی رہائش دو جو خود کے لیے پسند کرتے ہو

أسكنوهن من حيث سكنتم / أنکو وہی رہائش جیسی رہائش تمہاری ہے.

نعرہ نمبر 3:

عورت پر ظلم نہ کرو أگر وہ خود ظالم نہ ہو

فإن أطعنكم فلا تبغوا عليهن سبيلا / أگر وہ سرکش نہیں تو أن پر ظلم مت کرو.

نعرہ نمبر 4 :

عورت سے خطأ ہوجائے تو أس پہ سختی نہ کرو ، طلاق نہ دو بلکہ صلح کرواؤ

وإن خفتم شقاق بينهما فابعثوا حكما من أهله وحكما من أهلها / أگر دونوں کے درمیان جھگڑے کا خوف تو دونوں طرف سے صلح کے لیے ثالث مقرر کردو.

نعرہ نمبر 5 :

عورتوں کے ساتھ شادی کسی دنیوی مقصد کو حاصل کرنے کے لیے نہیں بلکہ محبت کے لیے کرو

فانكحوا ما طاب لكم من النساء / جنكو تم چاہتے ہو أن سے شادی کرو ( کسی کو مال و دولت کے حرص و ہوس کا نشانہ نہ بناؤ)۔

نعرہ نمبر 5 :

عورت کو منتھلی خرچہ دو.

وعلى المولود له رزقهن وكسوتهن بالمعروف / خاوند پر بیوی کے کپڑے و کھانے و رہائش کا خرچہ دینا ہے.

نعرہ نمبر 6:

میراث میں حق دو

للرجال نصيب مما ترك الوالدان والأقربون وللنساء نصيب مما ترك الوالدان والأقربون / عورتوں و مردوں کو میراث میں حصہ دو.

نعرہ نمبر 7:

عورت کی حفاظت کرو

هن لباس لكم وأنتم لباس لهن / عورت تمہاری عزت کی حفاظت کے لیے ڈھال ہے أور تم أسکی عزت کی حفاظت کے لیے ڈھال ہو

نعرہ نمبر 8 :

جب بیٹی پیدا ہو تو خوش ہوا کرو چہروں کو مرجھایا نہ کروں ۔

وإذا بشر أحدهم بالانثى ظل وجهه مسودا / جب بیٹی کی بشارت دی جاتی ہے تو أنکے چہرے سیاہ ہوجاتے ہیں ( یہ کتنی ہی بری عادت ہے / وساء ما یحکمون)۔

نعرہ نمبر 9 :

عورت کو ہیرہ منڈی جیسے أڈوں کی زینت مت بنائیں

ولا تكرهوا فتياتكم على البغاء / عورت سے أپنی جنسی خواہش پوری کرنے کے لیے أس کو ہیرا منڈی جیسے أڈوں پہ مت فروخت کریں.

نعرہ نمبر 10 :

عورت کو تعلیم دیں تاکہ وہ أپنی روزی کما سکے مشکل وقت میں

وللنساء نصيب مما اكتسبوا / عورت جو کمائے وہ أسی کا ہے۔

نعرہ نمبر 11

عورت کی رائے کی قدر کرو

والله يسمع تحاوركما / اللہ نے آپکی أور أس عورت کی دونوں کی بات کو سنا

نعرہ نمبر 12 :

عورت کی شادی أسکی رضا مندی سے کریں

فلا تعضلوهن أن ينكحن أزواجهن إذا تراضوا بينهم بالمعروف / جب وہ شادی کے لیے راضی ہوں تو أنکو منع نہ کرو۔

إسکے علاوہ بھی بہت سے نعرے ہیں جو قرآن نے عورت کے ظالمین کے سامنے لگائے أور احادیث رسول صلی اللہ علیہ وسلم تو بے شمار ہیں۔

جو نعرے گزشتہ روز پاکستان میں ویمن ڈے پہ لگائے گے أنکا مطلب صرف عورت کو أپنی جنسی خواہش کے لیے غلام بنانا ہے ۔