نیوزی لینڈ دہشت گردی اور مغرب کا دہرا معیار

مرشد کریم علامہ شاہ تراب الحق رح اکثر اپنے خطاب میں ایک تمثیل بیان کیا کرتے تھے کے ایک شخص کا ایم اے جناح روڈ پر ایکسیڈنٹ ہو گیا وہ تھانے میں رپورٹ درج کرانے پہنچا کے اسے بس نے ٹکر مار کر زخمی کردیا ہے آپ رپورٹ درج کر کے اسکا چالان کیجے اور ڈراںُیور کو گرفتار کیجے تھانے دار نے سارا ماجرا سن کر اس شخص سے کہا کے مجرم تم ہو پرچہ تمہارے خلاف درج ہو گا ایم اے جناح روڈ پر تو بسیں چلتی رہتی ہیں اور ایکسیڈنٹ ہوتے رہتے ہیں قصور تمہارا ہے تم سڑک پر آےُ ہی کیوں

آج یہ مثال مغرب پر مکمل صادق آتی ہے CNN ہو یا BBC کسی بے بھی واقع کو دہشت گردی کا واقعہ کہنے سے گریز ہی کیا صرف فاںُرنگ کا واقعہ کہا جبکہ آسٹریلیا کے ساستدانوں نے تو اس کا ذمہ دار ہی مسلمانوں کو ٹہرا دیا کے یورپ میں ان کی بڑھتی ہوںُی آبادی اور شدت پسندانہ سوچ اس واقعہ کی وجہ ہے

الامان والحفیظ

چہرہ روشن اندروں چنگیز سے تاریک تر

از محمد افتخار غزالی