مالی معاملات اور تجارتی لین دین میں کسی کے حلیے یا مذہبی عہدے سے متاثر نہ ہوں

آپ کسی بھی مسلک سے تعلق رکھتے ہوں مالی معاملات اور تجارتی لین دین میں کسی کے حلیے یا مذہبی عہدے سے متاثر نہ ہوں بلکہ اچھے طریقے سے جانچ کر کسی سے دنیوی معاملات طے کریں عموما لوگ سامنے والے کے ظاہری حلیے یا مذہبی ادارے و تنظیم کے عہدے کی بنیاد پر اپنا قیمتی سرمایہ اس کے سپرد کر دیتے ہیں اور پھر جب وہ بہروپیہ دھوکا دیتا ہے تو دینِ اسلام سے بدظن ہو جاتے ہیں اسلام کا اس میں کوئی قصور نہیں ہوتا دین تو کہتا ہے ہوش سے معاملات طے کرو

یہ تصویر دیوبند مکتبہ فکر کے ایک معتبر مفتی عبداللہ شوکت کی ہے جس نے مضاربت کے نام پر اربوں روپے کا گھپلا کیا گذشتہ دنوں اسے گرفتار کر لیا گیا

اس طرح کے لوگ ہر جگہ ہوتے ہیں ہوشیار رہیں ۔۔۔۔ شکریہ

🖊محمد اشفاق مدنی

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.