أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَمَنۡ يَّتَوَلَّ اللّٰهَ وَ رَسُوۡلَهٗ وَالَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا فَاِنَّ حِزۡبَ اللّٰهِ هُمُ الۡغٰلِبُوۡنَ۞

ترجمہ:

اور جو اللہ اور اس کے رسول اور ایمان والوں کو دوست بنائے تو بیشک اللہ کی جماعت ہی غالب ہے۔ ؏

تفسیر:

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے : اور جو اللہ اور اس کے رسول اور ایمان والوں کو دوست بنائے تو بیشک اللہ کی جماعت ہی غالب ہے۔ (المائدہ : ٥٦) 

اس آیت میں اللہ تعالیٰ نے اپنے ان تمام بندوں کو خبر دی ہے جو اللہ ‘ اس کے رسول اور مسلمانوں کی رضا جوئی کے لیے یہود کی دوستی اور ان کے حلف سے بیزار ہوگئے تھے اور ان کو بھی خبر دی ہے جنہوں نے یہود کی دوستی اور ان کے حلف کو برقرار رکھا اور گردش ایام کے خوف سے ان کی دوستی کی طرف دوڑے۔ ان سب کو اللہ تعالیٰ نے یہ خبر دی ہے کہ جو اللہ پر بھروسہ رکھے اور اللہ ‘ اس کے رسول اور مسلمانوں سے دوستی رکھے تو ان ہی کو غلبہ ہوگا۔ کیونکہ یہ اللہ کی جماعت ہے اور مال کار اللہ کی جماعت ہی کو غلبہ ہوگا ‘ نہ کہ شیطان کی جماعت کو۔

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 5 المائدة آیت نمبر 56