ممتاز قادری نجس مشرک دیوبندی فتوی

ممتاز قادری علیہ الرحمة کی شخصیت سے پاکستان کا بچہ بچہ واقف ہے ان کا عشق رسول تھا جس نے ان کو غازی بنایا لیکن جن کے اپنے اکابرین کو عشق رسول کی ہوا بھی نہ لگی ہو اور ساری زندگی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی گستاخیاں اور شان میں کمیاں کرتے کرتے گزار دی وہ نجس العین(۔۔۔۔۔) کی اولادیں ممتاز قادری علیہ الرحمة پر بھونک رہے ہیں

دیوبندی اکابرین اور دار العلوم دیوبند کے خنزیروں(اگر ممتاز قادری معاذ اللہ نجس ہو سکتے ہیں تو ان کے اکابرین خنزیر کیوں نہیں ہو سکتے) کی مصدقہ کتاب میں ممتاز قادری علیہ الرحمة کے بارے میں لکھا ہے کہ

ایک نجس مشرک سرکاری ملازم۔۔۔۔۔۔۔

ان کتوں کے بھونکنے سے کیا ہو گا جب ممتاز قادری علیہ الرحمة سرکار دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم کی بارگاہ میں مقبول ہو چکے ہیں لیکن میں آپ کو بتاتا ہوں کہ

ممتاز قادری علیہ الرحمة کو نجس مشرک کہنے والوں کے اپنے ہی اکابرین نجس کافر ہیں

کئی دیوبندی اکابرین کی تصدیق سے نکلنے والا رسالہ “مجلہ صفدر”میں ممتاز قادری علیہ الرحمة کی آن بان شان بیان کی ہے اور لکھا ہے کہ

الحمد للہ:آج غازی ممتاز قادری شہید کے مبارک چہرے اور محض ان کے عشق رسول کی بنا پر ان کی زیارت کے لئے آئے ہوئے خوش نصیب چہروں کو دیکھ کر  افلحت الوجوہ کا نظارہ سامنے آگیا

یہ بھی دیوبندی جنہوں نے ممتاز قادری علیہ الرحمة کا عشق رسول تسلیم کرتے ہوئے ان کی زیارت کے لئے آنے والوں کو گویا حدیث کے الفاظ کا مصداق کہا

سوال:اب سوال یہ ہے کہ اگر معاذ اللہ ممتاز قادری علیہ الرحمة مشرک تھے تو مشرک کو عاشق رسول کہہ کر اور شہید کہہ کر یہ دیوبندی اکابرین کیا ہوئے

اور اگر وہ عاشق رسول تھے اور یقینا تھے تو یہ نجس العین کی اولادیں ایک عاشق رسول کو مشرک کہہ کر خود کافر ہوئے

نوٹ!یہ سب دیو بندیوں کے اپنے اصولوں کے مطابق ہے۔دیوبندی جس کو چاہیں کافر بنائیں