شہلا رضا کی گفتگو آئین کے آرٹیکل 19 کی خلاف ورزی ہے.

یہ تعزیرات پاکستان کی دفعہ 153 a کے تحت جرم کے زمرے میں آتی ہے جس کی سزا پانچ سال تک قید اور جرمانہ ہے.

یہ تعزیرات پاکستان کی دفعہ 298 کے تحت بھی جرم ہے.

اس پر تعزیرات پاکستان کی دفعہ. 298 A کا اطلاق بھی ہوتا ہے.

یہ. نیشنل ایکشن پلان کے رہنما اصولوں کی بھی خلاف ورزی ہے.

ایسی گفتگو کا نشر ہونا پیمرا رولز 2009 کے شیڈول 1 میں دیے گئے ضابطے کی متعدد شقوں کی خلاف ورزی ہے.

یہ گفتگو پیمرا کنٹنٹ رہگولیشنز کی دفعہ 4 اور 5 میں طے کیے گئے اصولوں کی بھی خلاف ورزی ہے.

ماہر قانون دان

Asif Mahmood sb