*دُعائے افطار کب پڑھے؟*

اَللّٰھُمَّ اِ نِّیْ لَکَ صُمْتُ وَبِکَ اٰمَنْتُ وَعَلٰی رِزْقِکَ اَفْطَرْتُ

(اے اللہ ! میں نے تیرے ہی لیے روزہ رکھا اور تیرے ہی اوپر ایمان لایا اور تیرے ہی رزق پر افطار کیا)

اس دعا کو افطار کر کے پڑھ لینا چاہیے۔ عام طور سے لوگ افطار سے پہلے ہی اس دعا کو پڑھ لیتے ہیں جب کہ یہ افطار کرنے کے بعد کی دعا ہے۔ بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ پڑھ کر افطار کرے پھر مذکورہ دعا پڑھے، ہاں درود شریف اوّل آخر ضرور پڑھ لینا چاہیے

(ماخوذ ماہ رمضان المبارک اور ھماری ذمہ داریاں از مولانا محمد عبدالمبین نعمانی قادری مطبوعہ نوری مشن مالیگاؤں)

ترسیل:

نوری مشن مالیگاؤں