حدیث نمبر :534

روایت ہے حضرت جابر سے فرماتے ہیں فرمایا رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے کہ بندے اور کفر کے درمیان نمازچھوڑنا ہے ۱؎ (مسلم)

شرح

۱؎ یعنی بندہ مؤمن اورکفر کے درمیان نمازکی دیوارحائل ہے جو اس تک کفرکونہیں پہنچنے دیتی جب یہ آڑ ہٹ گئی تو کفر کا اس تک پہنچنا آسان ہوگیا،ممکن ہے کہ آیندہ یہ شخص کفر بھی کر بیٹھے۔خیال رہے کہ بعض آئمہ ترک نمازکو کفربھی کہتے ہیں،بعض کے نزدیک بے نمازی لائق قتل ہے اگرچہ کافرنہیں ہوتا،ہمارے امام صاحب کے نزدیک بے نمازی کو مارپیٹ اورقید کیا جائے جب تک کہ وہ نمازی نہ بن جائے۔ہمارے ہاں اس حدیث کا مطلب یہ ہے کہ بے نمازی قریب کفر ہے یا اس کے کفر پر مرنے کا اندیشہ ہے یا ترک نماز سے مراد نماز کا انکارہے،یعنی نماز کا منکرکافرہے۔