کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

بنایا جو منگتا کرم ہو خدایا

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

بنایا جو منگتا کرم ہو خدایا

ارادوں پہ غالب ارادہ تِرا ہے

تِرا حکم سب پر ہمیشہ چلا ہے

الٰہی جگا دے میرا بختِ خفتہ

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

میری لغزشوں پر کرم کا قلم ہو

ا سی سے جہاں میں میرا ا ب بھرم ہو

رہے حشر میں بھی کرم کا سہارا

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

تو سنتا ہے سب کی ہمار ی بھی سُن لے

کہ بندوں میں خاص اپنے ہم کو بھی چُن لے

مجیب ان دعائوں کو مقبول فرما

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

میں ہوں تیرا ساجد تو مسجود میرا

میں ہوں تیرا بندہ تو معبود میرا

اثاثِ عبادت مجھے دے دے مولیٰ

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

تیرے گھر کے چکر لگاتا ہوں مولیٰ

یوں ہی سارے عصیاں مٹاتا ہوں مولیٰ

رضا تیری حاصل ہو اب تو خدایا

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

ہے رحمن تو ہی، ہے جواد توہی

ہے غفار تو ہی، ہے ستار توہی

ہماری خطائوں کو تو معاف فرما

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

بنا ہم کو تالیِٔ قرآن یا رب

کھلیں ہم پہ اسرارِ قرآن یا رب

عطا ہو ہمیں ماہِ رمضاں کا صدقہ

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

محبت میں آقا کی، شام و سحر ہو

میری زیست یا رب اسی میں بسر ہو

چراغِ محبت جلے یہ ہمیشہ

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

نظر میں ہے کعبہ تو دل میں مدینہ

بھلا کیسے ڈوبے گا میرا سفینہ

مجھے علم کا بھی عطا ہو خزینہ

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا

جیوں بن کے مولیٰ ہمیشہ میں شاکرؔ

عنایت حبیب خدا کی ہو وافر

بنے دل بھی ذاکر رسولِ خدا کا

کرم ہو کرم ہو کرم ہو خدایا