سر کارِ اعظم ﷺکی کئی ازواج مطہرات اورکئی صاحبزادیاں تھیں

القرآن :یایھا النبی قل لا زواجک وبنتک ونسآء المؤمنین ۔

ترجمہ :اے نبی اپنی بیویوں اور صاحبزادیوں اور مسلمانو ں کی عورتوں سے فرمادو۔

(سورہ احزاب ،پارہ :۲۲،آیت نمبر ۵۹)

ازواج جمع ہے زوج اور زوجہ کی اور بنٰت جمع ہے بِنت یعنی بیٹی کی ۔اس آیت سے معلوم ہوا کہ سرکارِ اعظم ﷺکی کئی ازواجِ مطہرات اور کئی صاحبزادیاں تھیں صرف حضرت خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ عنہا کو حضور ﷺکی زوجہ اور صرف حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا کو حضور ﷺکی صاحبزادی کہنے والوں کے عقیدے کی اس آیت نے نفی کر دی ۔