درودِ ابراہیمی

درود شریف کے وہ الفاظ جو احادیث میں آئے ہیں، کوئی شک نہیں ہے کہ ان کا پڑھنا اِس اعتبار سے کہ وہ الفاظ نبی ﷺ کی زبان اقدس سے نکلے ہوئے ہیں، افضل ہے۔بعض علماء نے کہا کہ تمام درودوں میں افضل وہ درود ہے جو اَلتَّحِیَّات کے بعد نماز میں پڑھا جاتا ہے اور وہ درود صحیح حدیثوں میں مخصوص کیفیتوں کے ساتھ آیا ہے، ہرمقصد کے حصول کے لئے کافی ہے، سب سے مشہور یہ درود شریف ہے

’’اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّ عَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰی اِبْرَاہِیْمَ وَ عَلٰی آلِ اِبْرَاہِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌoاَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّ عَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰی اِبْرَاہِیْمَ وَ عَلٰی آلِ اِبْرَاہِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ‘