نبوی دعائیں

نبوی دعائیں

ذیل میں ہم کچھ ایسی دعائیں تحریر کرتے ہیں جواحادیث کی کتابوں میں موجود ہیں ان دعائوں کو یاد کریں اور دارین کی بھلائیاں حاصل کریں ۔

دنیا و آخرت کی بھلائی کیلئے: حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا بیان ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اکثر یہ دعا کرتے تھے’’اَللّٰہُمَّ رَبَّنَا اٰتِنَا فِی الدُّنْیَا حَسَنَۃً وَّ فِی الْاٰخِرَۃِ حَسَنَۃً وَّقِنَا عَذَابَ النَّارِ‘‘ (بخاری ومسلم)

جو شخص اس دعا کو اپنا معمول بنائے گا انشاء اللہ اسے دنیا و آخرت میں بھلائی میسر آئے گی۔

ہر بلا سے نجات کے لئے: حضور اقدسﷺ نے ارشاد فرمایا جو شخص صبح و شام کو تین مرتبہ یہ دعاء پڑھے تو اس کو دنیا کی کوئی چیز نقصان نہیں پہنچائے گی ’’بِسْمِ اللّٰہِ الَّذِیْ لَا یَضُرُّ مَعَ اسْمِہٖ شَیْئٌ فِی الْاَرْضِ وَ لاَ فِی السَّمَائِ وَ ہُوَ السَّمِیْعُ الْعَلِیْمُ‘‘

بے چینی کے وقت کی دعا: حضرت عبداللہ بن عباس رضی اللہ تعالیٰ عنہما فرماتے ہیں کہ حضورﷺ کو جب کوئی بے چینی اور پریشانی لاحق ہوا کرتی تھی تو اس وقت آپ اس دعا کا ورد فرماتے تھے ’’لَا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ الْحَلِیْمُ الْحَکِیْمُ لَا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِیْمِ لَا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ رَبُّ السَّمٰوٰتِ وَ الْاَرْضِ وَ رَبُّ الْعَرْشِ الْکَرِیْمِ‘‘

شفائِ امراض کیلئے: روایت ہے کہ حضرت عبدالعزیز بن صُہیب اور حضرت ثابت بُنانی رضی اللہ عنہما دونوں حضرت انس صحابی رضی اللہ تعالی عنہ کی خدمت میں حاضر ہوئے اور ثابت بُنانی نے عرض کیا کہ اے ابوحمزہ (انس) میں بیمار ہوگیا ہوں، حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے فرمایا کیا میں اس دعا سے تمہارے مرض کا جھاڑ پھوٗنک نہ کر دوں جس دعا سے حضور ﷺ مریضوں پر شفاء کے لئے دم فرمایا کرتے تھے۔ حضرت ثابت بُنانی نے کہاکیوں نہیں؟ اس کے بعد حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے یہ دعاء پڑھی ’’اَللّٰہُمَّ رَبَّ النَّاسِ مُذْہِبَ الْبَأْسِ اِشْفِ اَنْتَ الشَّافِی لاَ شَافِیَ اِلَّا اَنْتَ شِفَائً لَّا یُغَادِرُ سَقَماً‘‘

مصیبت پر نِعْمَ الْبَدَلْ ملنے کی دعا: حضرت اُمّ المومنین بی بی اُمّ سلمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کہتی ہیں کہ میں نے حضور اقدس ﷺ سے یہ سُنا تھا کہ کسی مسلمان کو کوئی مصیبت پہنچے تو وہ ’’اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّآ اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ اَللّٰہُمَّ اَجِرْنِیْ فِیْ مُصِیْبَتِی وَ اخْلُفْ لِیْ خَیْراً مِّنْہَا‘‘ پڑھ لے تو اللہ تعالیٰ اس مسلمان کو اس کی ضائع شدہ چیز سے بہتر چیز عطا فرمائے گا۔

قرض ادا ہونے کی دعا: حضرت ابو امامہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ حضورﷺ نے مجھ سے ارشاد فرمایا کیا میں تم کو ایک ایسا کلام نہ تعلیم کر دوں کہ جب تم اس کو پڑھو تو اللہ تعالیٰ تمہاری فکر کو دفع فرما دے اور تمہارے قرض کو ادا کر دے۔ حضرت ابوامامہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے عرض کیا کیوں نہیں یا رسول اللہ ﷺ ضرور تعلیم فرمائیے تو آپ نے ارشاد فرمایا کہ تم روزانہ صبح و شام یہ دعا پڑھ لیا کرو:

’’اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُبِکَ مِنَ الْہَمِّ وَ الْحُزْنِ وَ اَعُوْذُبِکَ مِنَ العَجْزِ وَ الْکَسْلِ وَ اَعُوْذُبِکَ مِنَ الْجُبْنِ وَ الْبُخْلِ وَ اَعُوْذُبِکَ مِنْ غَلْبَۃِ الدَّیْنِ وَ قَہَرِ الرِّجَالِ‘‘

تونگری وخوشحالی: جو شخص دولت مند اور تونگر ہونا چاہے وہ بعد نماز فجر روزانہ پچیس مرتبہ’’ اِذَاجَآئَ نَصْرُ اللّٰہِ وَالفَتْحُo وَ رَأَیْتَ النَّاسَ یَدْخُلُوْنَ فِیْ دِیْنِ اللّٰہِ اَفْوَاجاً o فَسَبِّحْ بِحَمْدِ رَبِّکَ وَ اسْتَغْفِرْہٗ o اِنَّہٗ کَانَ تَوَّاباً‘‘ بحضور قلب پڑھاکرے۔

انشاء اللہ چند ہی روز میں مشکل آسان ہوگی اور مفلس مالا مال ہوتا چلا جائے گا۔

کھانا کھانے کے بعدکی دعا : کھانا کھانے کے بعد یہ دعا پڑھے اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ اَطْعَمَنَاوَسَقَانَا وَھَدٰنَا وَجَعَلَنَا مِنَ الْمُسْلِمِیْنَ ۔

جب کوئی نعمت ملے تو یہ دعا پڑھے: اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ بِنِعْمَتِہٖ تَتِمُّ الصَّالِحَاتُ ۔

سونے کی دعا : ’’اَللّٰہُمَّ بِاسْمِکَ اَمُوْتُ وَاَحْیٰی۔‘‘

سو کر اٹھوتو یہ دعا پڑھو: ’’ اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ اَحْیَانَا بَعْدَ مَا اَمَاتَنَا وَاِلَیْہِ النُّشُوْرُ ‘‘

جب نیا لباس پہنے تو یہ دعا پڑھے: اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ کَسَانِی مَا اُوَارِیُ بِہٖ عَوْرَتِی وَاَتَجَمَّلُ بِہٖ فِی حَیَاتِیْ۔

سفر کی دعا: حضرت عبد اللہ بن جابر رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم جب سفر پر جاتے وقت اونٹ پر سوار ہوتے تو تین بار ’’اللہ اکبر ‘‘ کہتے اس کے بعد فرماتے سُبْحٰنَ الَّذِیْ سَخَّرَ لَنَا ہٰذَا وَمَا کُنَّا لَہٗ مُقْرِنِیْنَoاَللّٰھُمَّ اِنَّا نَسْئَلُکَ فِی سَفَرِنَا ہٰذَا الْبِرَّ وَالتَّقْویٰ وَمِنَ الْعَمَلِ مَا تَرْضٰی ۔اَللّٰھُمَّ ھَوِّنْ عَلَیْنَا ہٰذَا السَفَرَ وَاطْوِ عَنَّا بَعْدَہٗ اَللّٰھُمَّ اَنْتَ الصَّاحِبُ فِی السَّفَر وَالْخَلِیْفَۃُ فِی الَاھْلِ اَللّٰھُمَّ اِنِّی اَعُوْذُ بِکَ مِنْ وَّعَثَائِ السَّفَرِ وَکَآبَۃِ الْمَنْظَرِ وَسُوْئِ الْمُنْقَلَبِ فِی الْاَھْلِ وَالْمَالِ وَالْوَلَدِ ۔

اور جب سفر سے واپس ہو تو یہ دعا پڑھے ۔اٰئِبُوْنَ تَائِبُوْنَ عَابِدُوْنَ لِرَبِّنَا حَامِدُوْنَ ۔( مسلم)

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.