وہ عقائد جن کا مسلک اہلسنّت سے کوئی تعلق نہیں

وہ عقائد جن کا مسلک اہلسنّت سے کوئی تعلق نہیں

سب سے پہلے مولوی طالب الرحمن کی کتاب ’’بریلوی ،دیوبندی اصل میں دونوں ایک ہیں ‘‘ اس کتاب میں عقائد اہلسنّت پر اعتراضات کے جوابات دیئے جائیں گے ۔

الزامی اعتراض }

اٹھا دو پر دہ دکھادو جلوہ

کہ نور باری حجاب میں ہے

عقیدہ: وحدت الوجود یعنی اللہ خود نبی ﷺکی شکل میں دنیا میں آیا ۔

جواب : یہ اعتراض بالکل بے وقوفوں جیسا ہے اعلیٰ حضرت فاضل بریلی علیہ الرحمہ نے اس شعر میں حضور ﷺ سے عر ض کی ہے کہ یارسول اللہ ﷺ!رخ مبارک سے پردہ اٹھا دوکہ اللہ تعالیٰ کا نور (کیونکہ محبوب ﷺکو اللہ تعالیٰ نے اپنے نور کے فیض سے پیدا فرمایا ہے )پردہ میں ہے ۔

الزامی اعتراض }

احمد رضا بریلوی نے اپنا نام عبدالمصطفیٰ رکھ لیا ۔

جواب: عبدالمصطفیٰ کا مطلب غلام مصطفی ﷺہے اور بندہ کے بھی ہے جیساکہ آجکل لوگ یہ کہتے ہیں کہ ہمارا بندہ تمہارے پاس فلاں چیز لینے آئے گا تو کیا وہ بندہ سیٹھ کا ہوگیا ۔نہیں بلکہ بندہ خدا تعالیٰ کا ہی ہے سیٹھ کا آدمی اور نوکر ہے اسی طرح عبدالمصطفیٰ یا عبدالعلی نام رکھنا اس معنیٰ میں ہے کہ غلام مصطفی ،غلامِ علی جو کہ صحابہ کرام علیہم الرضوان کی سنت ہے ۔

الزامی اعتراض }

خواجہ غلام فرید فرماتے ہیں کہ ایک شخص خواجہ معین الدین چشتی کے پاس آیا اور عرض کیا کہ مجھے اپنا مرید بنائیں ۔فرمایا کہہ لاالہ الا اللہ چشتی رسول اللہ ‘‘اللہ کے سواکوئی معبو د نہیں اور چشتی اللہ کا رسول ہے ‘‘۔(معاذاللہ )۔(فوائد فرید یہ ص 83)

جواب :سب سے پہلے یہ کتاب جسکا نام فوائد فرید یہ ہے اِسے کسی سُنِّی ادارے نے شائع نہیں کیا ہے لہٰذا یہ کتاب بھی من گھڑت ہے اور یہ عبارت بھی من گھڑت ہے کوئی بھی اس کتاب کو مستند ثابت نہیں کر سکتا ۔

الزامی اعتراض }

احمد رضا بریلوی لکھتے ہیں کہ درد سر اور بخار وہ مبارک امراض ہیں جو انبیاء علیہم السلام کو ہوتے تھے ۔(آگے چل کر احمد رضا لکھتے ہیں )الحمدللہ کہ مجھے حرارت اور درد سر رہتا ہے ۔ (ملفوظات )

جواب : اعلیٰ حضرت امام احمد رضا علیہ الرحمہ فخر فرماتے ہیں کہ درد سر اور بخار انبیاء کرام علیہم السلام کو بھی ہوتے تھے پھر فرماتے ہیں کہ اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ مجھے بھی سر درد رہتاہے اور حرارت رہتی ہے جس سے انبیاء کرام علیہم السلام کی سنت مبارکہ ادا ہوجاتی ہے اور ثواب ملتا ہے ۔

یہ اعتراضات طالب الرحمن (غیر مقلّد )کے تھے جن کے جوابات دیئے گئے۔

ان عقائد کا تذکرہ جنکا مسلک اہلسنّت سے کوئی تعلق نہیں ہے

1)…مزارات پر سجدہ کرنے والے اور طواف کرنے والوں کا اہلسنّت سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔

چنانچہ ہمارے امام احمد رضا خان صاحب فاضل بریلی علیہ الرحمہ اپنی کتاب’’ الزبدۃ الزکیہ فی التحریم السجود التحیہ‘‘ میں متعد آیات اور چالیس احادیث سے غیرِ خدا کو سجدہ عبادت کفر مبین اور سجدہ تعظیم حرام و گناہ لکھتے ہیں ۔

2)…مزارات پر الٹی سیدھی حرکتیں ،ناچ گانا ،چرس پینا ،جگہ جگہ عاملوں اور جعلی پیروں کے بورڈ ہوتے ہیں ان کامون کواہلسنّت وجماعت پر ڈال کر بد نام کرتے ہیں ان سب کام سے مسلک اہلسنّت سنی حنفی بریلوی سے کوئی تعلق نہیں ۔

3)…عوام میں غلط رسم و رواج تعزیہ بنانا ،ناریل توڑنا ،ڈھول بجانا ،دس محرم کو ڈھول بجا کر گلیوں میں گھومنا ان سب غلط کاموں مسلک اہلسنّت وجماعت سنی حنفی بریلوی سے کوئی تعلق نہیں ۔ہمارے امام احمد رضا خانصاحب فاضل بریلی علیہ الرحمہ نے اس پر پورا رسالہ لکھا ہے اور فرمایا ہے کہ تعزیہ بنانا حرام ہے ۔

4)…ربیع الاول شریف میں بعض لوگ بینڈباجے بجاتے ہوئے جلوس نکالتے ہیں یہ گناہ ہے اہلسنّت کا عقیدہ یہ نہیں ہے کہ بلکہ اہلسنّت کا عقیدہ ہے کہ نعت شریف پڑھتے ہوئے ادب سے جلوس نکالا جائے ۔

5)…عورتوں کوبے پر دہ مزارات پرجانے کی اہلسنّت و جماعت میں بالکل اجازت نہیں ہے ۔

6)…سوئم میں دعوتیں کرنا بھی مسلک اہلسنّت و جماعت میں منع ہے ہمارے امام احمد رضا خانصاحب فاضل بریلی علیہ الرحمہ اپنی کتاب دعوتِ میت میں لکھتے ہیں کہ سوئم کا کھانا غریبوں اور محتاجوں کا حق ہے ان کو کھلانا چائیے ۔

7)…محرم الحرام میں اماموں کا فقیر بنانا ،ہرے کپڑے باندھنا منع ہے اس کے علاوہ الٹی سیدھی ناجائز منتیں ماننا بھی منع ہیں اعلیٰ حضرت علیہ الرحمہ کے خلیفہ حضرت امجد علی اعظمی علیہ الرحمہ اپنی مشہور زمانہ کتاب’’ بہارِ شریعت ‘‘میں ان تمام کاموں کو گناہ لکھا ہے ۔

8)…ڈف اور میوزک کیساتھ نعتیں پڑھنا اور سننا بھی علمائے اہلسنّت نے منع لکھا ہے یہ کام نعت کو بدنام کرنے کے لئے کئے جاتے ہیں ۔

9)…صفر کے مہینے کو منحوس کہنا ،تیرہ تیجی کوچنے اور گندم پکانا اور آخری بدھ کو سیر کیلئے نکلنا یہ بھی عقائد اہلسنّت کے خلاف ہے علمائے اہلسنّت اس کا مکمل رد فرماتے ہیں ۔

10)…لفظ ’’بریلوی‘‘کیا ہے ؟

ہندوستان کے ایک شہر کانام بریلی ہے ۔چودہ سو سالہ عقائد جس پر صحابہ کرام علیہم الرضوان کا عمل رہا ان اسلامی عقائد کاتحفظ بریلی کی سر زمین سے ہوا ۔اسی لئے اہلِ حق کو اہلسنّت و جماعت سنی حنفی بریلوی کہا جاتا ہے ۔

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.