بڑی مشکل سےتصویر ملی۔۔۔زیارت کیجئیے

امام اہلسنت،امام احمدرضا فاضل بریلی علیہ الرحمہ کو پوری دنیا میں متعارف کروانےوالی شخصیت

حکیم محمدموسی امرتسری رحمة اللہ علیہ

1968عیسوی میں آپ نے”مرکزی مجلس رضا”کےنام سےادارہ بنایا۔

پہلی مرتبہ آپ نےہی”یوم رضا”منانا شروع کیا۔لاکھوں کی تعداد میں اعلحضرت علیہ الرحمہ کی کتابیں چھپوا کر پوری دنیا میں پہنچائیں۔قطب مدینہ،شاہ ضیاءالدین قادری علیہ الرحمہ نےآپ کو”حکیم اہلسنت” کا لقب عطافرمایا۔

آپ نےسینکڑوں نوجوانوں کےہاتھ میں قلم تھما کر انھیں ادیب،مصنف،مورخ بنا دیا

جن میں مولانا صادق قصوری،ڈاکٹر مسعوداحمدقادری،سیدفاروق القادری جیسی عظیم شخصیات بھی شامل ہیں۔

آپ کی رہنمائی پر سینکڑوں لوگوں نےاعلحضرت کی شخصیت پرایم فل،پی ایچ ڈی کےمقالات لکھے

اور آپ نےاپنی ذاتی لائبریری جس میں ہزاروں نایاب کتب تھیں اپنی زندگی میں ہی “پنجاب یونیورسٹی” کو ہدیہ کر دی۔آج بھی پنجاب یونیورسٹی،لاہور میں آپ کےنام “حکیم محمدموسی” سےذخیرہ کتب موجود ہےجس سےاہل علم فائدہ اٹھاتےہیں۔

آپ نےکئی ایک کتابوں کی تصنیف کےعلاوہ کشف المحجوب پر کمال کا مقدمہ بھی لکھا

آپ کی قبر انورپر اللہ پاک کی خصوصی رحمتوں کا نزول ہو

منقول از محمد احمد