پہلی شرط :- حریت

مسئلہ: یعنی آزاد ہونا یعنی غلام نہ ہونا۔

مسئلہ: غلام پر جمعہ فرض نہیں اوراس کا آقا منع کرسکتا ہے ۔( عالمگیری ، بہار شریعت ، جلد ۴ ، ص ۹۹ )

نوٹ :- اس دور میں یہ مسئلہ قریب مفقود ہے کیونکہ اب غلام کارواج قریب ختم ہی ہے ۔ پہلے زمانہ میں دو قسم کے آدمی ہوتے تھے ۔ آزاد اور غلام ۔ غلاموں کا بازار لگتا تھا اور غلاموں کی خرید وفروخت ہوتی تھی ۔ان غلاموں کے لئے یہ حکم ہے کہ ان پر جمعہ فرض نہیں ۔ اس دورمیں اب اس قسم کے غلام نہیں پائے جاتے ۔ لہٰذا غلام سے غلط مراد لے کر کوئی یہ مسئلہ نہ گڑھ لے کہ میں فلاںکا نوکر یا خادم ہوں لہٰذا مجھ پر جمعہ فرض نہیں ۔ بلکہ غلام سے مراد وہ لوگ ہیں جو کسی کا خریدا ہوا اور اس کی ملک ہو۔ اس مسئلہ میں جس غلام کا ذکر ہے اس سے نوکر ، ملازم یاخادم مراد نہیں