اسلام کا قانون رب کا ہے

دور حاضر میں اسلام کے خلاف چلاِّنے والے ملحدین اور مستشرقین عورتوں کو یہ کہکر ورغلانے کی کوشش کرتے ہیں کے اسلام نے عورتوں کو کوئی حق نہیں دیا،انہیں قیدی بنا دیا،انہیں مردوں کے تابع کر دیا جب کہ اگلے بیانوں میں ان سب کا جواب دیا جاچکا ہے،ملحدین کا کوئی اعتراض بغیر عقلی اور نقلی جواب کے نہیں چھوڑا گیا،مسلمان عورتوں کو تو یقین ہی ہے کہ اسلام میں ہمارے ساتھ جو انصاف کیا گیا ایسا انصاف دنیا میں کہیں بھی نہیں مل سکتا،اور مل بھی کیسے سکتا ہے ؟دنیا کے لوگ اپنے مفاد پر فیصلہ کر تے ہیں جبکہ اسلام کا قانون رب کا ہے جو ہر عیب سے پاک ہے،اور ہمارے پاس لانے والے اس کی نبی ہیں جو معصوم اور گناہ سے پاک ہیں،پھر اسلام کے قانون والا انصاف اور کہاں مل سکتا ہے ؟

علم ہماری ہی میراث ہے ۔ گمشدہ کو تلاش کے دیکھو

بے عیب خدا کا قانون بے عیب

دشمنوں کے اعتراض پر دئے گئے ہمارے جواب مسلمانوں کو ہر طرح کے شکوک و شبھات سے بچا سکتے ہیں،اور دنیا کا کوئی بھی انصاف پسند شخص ہوگا اسے یہ قبولنا ہوگا کہ یہ قانون سراسر انصاف ہے اس میں نا انصافی کا شائبہ تک نہیں ہے،جیسے اللہ اور اسکا رسول بے عیب ہیں ایسے ہی انکے یہ قانون ہیں

قانون میں عیب آ سکے کیسے ۔ خدا رسول سبحان و معصوم ہیں