*خالص جذبوں اورتازہ ولولوں سے لبریزا تاریخی اجتماع*

(احباب خوب شئرکرکے دجالی میڈیا کے دجل کو خوب عیاں کیجئے)

خالصتااہلسنت کے کسی پلیٹ فارم پرعرصہ دراز بعد بغیرکسی “بساکھی”کےاتنا بڑا لاکھوں کا اجتماع اور وہ بھی انتھائ نظریاتی,دیکھنے کو نصیب ھوا.

امیر تحریک بظاہروہیل چئر پہ بیٹھے ایک معذور بابے لگتے ہیں.مگرہمت,جرات,جوش اور ولولہ ایسا کہ جس کی حرارت سے پورا مجمع ہی ٹرپ ٹرپ جائے.

مختصر بیان مگرکمال بیان تھا.کئ اعتبار سے کہا جاسکتا ھے کہ مینار پاکستان کے سائے تلے اس نصف صدی میں ہونیوالا نرالہ اور انوکھا اجتماع تھا.

امیر جماعت نے جب سب کو کہا کہ موبائل کی بتیاں چلاو تو یوں لگا جیسے سب لبرلزکی بتیاں بجھ گئ ھوں.

اتنے بڑے اجتماع میں شریک تمام شرکاء سے تحریک اور اگلے الکیشن جیتنے کی محنت کے لئے لیا گیا انتھائ جامع ومانع حلف بہت جلد اپنے اثرات دکھائے.

یہ جماعت آئندہ الیکشن کی سب سے بڑی اور منظم ومربوط جماعت ثابت ھوگی.ان شاءاللہ.

2نومبر2019مینارپاکستان کے اس تاریخی ولولہ انگیزاجتماع ، شرکا کا مثالی نظم و ضبط اور جوش و خروش جہاں انتھائ قابل تعریف تھاوہاں وطن عزیز میں دینی قوتوں کی بیداری کا مظہر ہے.جس پہ یہ کہنا بالکل سوفیصد مبنی برحقیقت ھوگا کہ پھونکوں سے اب یہ چراغ واقعی بجھایا نہ جائے گا۔

#قارئین کرام

*وہ سفید پرندوں کےغول کا رات کے اس پہر اجتماع پہ چکر کاٹنا اور عین بابا جی کے خطاب میں جب ذکرصحابہ واہلبیت چھڑا اور سیدی داتا صاحب کے فیضان کے نعرے فضاء میں گونجے تو اس وقت ان سفید سفید پرندوں کااسٹیج کے بالکل قریب آجاناواضح اشارہ الہی تھا کہ صرف خاکی ہی نہیں نوری مخلوق بھی تشریف فرما ھے اور ان خالص جذبوں سے سرشارشمع رسالت کےپروانوں اور ختم نبوت کے محافظوں کوگویاقدرت نوری مخلوق کے ذریعے پرٹوکول دے رہی ھے .

عجب بات ھے کہ دعا کے فوری بعد وہ نورانی پرندے پھر کسی کو وہاں نظر نہیں آئے.بابا جی کے بیان کے دوران بارش کی بونداباندی یا یوں کہئیےنور کی ہلکی ہلکی پھوار اور وہ سفیدپرندوں کے دو غول میرے لئے تو یہ سارا منظر ایک عجوبے سے کم نہیں تھا*

واللہ اعلم باالصواب

فیسبک کی بدمعاشی اور تعصب کی بنا پرجماعت اور امیر جماعت کا نام کھل کرنہیں یہاں لکھا گیا چنانچہ احباب یہ اعتذار قبول فرمائیے گا.

زندہ باد اس تحریک کے ذمہ داران زندہ باد

محمدنعیم جاوید نوری