جنتی ہونے کی بشارت

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ کے پاس ایک اعرابی (دیہاتی)آیا اس نے کہا :مجھے ایسا عمل بتائیے کہ جب میں اسے کرلوں جنت میں داخل ہوجائوں ۔آپ انے فرمایا:اللہ کی عبادت کر ،اس کے ساتھ کسی کوشریک نہ ٹھہرا ،فرض نمازپڑھ اور فرض زکوٰۃادا کر ،رمضان کے روزے رکھ ،اس نے کہااس ذات کی قسم جس کے قبضے میں میری جان ہے نہ میں اس (عمل)پر کچھ زیادتی کروںگا نہ اس سے کچھ کم کروںگا ۔جب واپس ہواتو نبی کریم ﷺ نے فرمایا :جس شخص کو یہ پسند ہو کہ وہ ایک جنتی آدمی کو دیکھے تو وہ اس (اعرابی) کی طرف دیکھ لے۔ (بخاری شریف)

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو!مذکورہ حدیث شریف میں کیٔ اعمال کا ذکر کیا گیا ، لیکن موضوع چونکہ نماز کاہے اس لئے نماز کے حوالے سے کچھ عرض کرتا ہوں ۔ میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو ! نماز قائم کرنے والا اتنا عظیم ہے کہ تاجدارِ کائناتﷺ نے ایسے شخص کو جنتی فرمایا ہے۔ جس کسی کو خواہشِ جنت ہو اسے چاہئیے کہ وہ نماز کی پابندی کرے ۔ اوراپنے آپ کو ترک ِنماز سے بچائے ۔ روزے کا پابند بنے ،زکوٰۃ کی ادائیگی میں کوتاہی نہ کرے ۔انشاء اللہ ! ان اعمال کا پابند دنیا ہی میں جنت کی بشارت کا مستحق بن جائے گا ۔ اللہد ہم سب کو مذکورہ اعمال کی پابندی کی توفیق عطا فرمائے ۔آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ والتسلیم