*میں بھی بھوپال اجتماع جانا چاہتا ہوں…….*

لیکن

*میں نے سوچا کیوں نا بھوپال اجتماع جانے کے فضائل کو پڑھ لوں لہذا میں نے احادیث کی کتب پڑھی تو اس نتیجے پر پہنچا*

*کہ*

📚 بخاری شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں.

📚 مسلم شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں.

📚 ترمذی شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 ابوداؤد شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 نسائی شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 ابن ماجہ شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 مسند احمد میں حج اجتماع تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 مسند امام اعظم میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 موطا امام مالک میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 مستدرک حاکم میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 بیہقی میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 مشکوۃ شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال جیسے اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

*احادیث کے بعد فقہ کی کتابوں میں بھوپال اجتماع کا عنوان تلاش………*

*تو اس نتیجے پر پہنچا*

*کہ*

📚 فقہ حنفی کی سب سے مستند کتاب ھدایہ میں حج کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 قدوری شریف میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 فتاوی عالمگیری میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 کنزالدقائق میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 فتاوی شامی میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 بدائع الصنائع میں حج کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 امام مالک کی فقہ کی کتاب المدونہ الکبری میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

📚 امام شافعی کی فقہ کی کتاب ” الام ” میں حج اجتماع کا عنوان تو ھے مگر بھوپال اجتماع کا کوئی عنوان نہیں ۔

لہذا

آخر میں اس نتیجے پر پہنچا کہ یہ ایک بدعت ہے جس کا اسلام کوئی تصور نہیں

خدارا آپ حضرات سے گزارش ہے کہ اس بدعت سے خود بھی بچیں اور پوری امت مسلمہ کو آگاہ کریں کہ یہ ایک بدعت اور حدیث پاک میں صاف لفظوں میں سرکار دوجہاں، سرور کونین، ہم سب کے آقا حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا : *ہر بدعت گمراہی ہے اور ہر گمراہی جہنم میں لے جانے والی ہے*

(نوٹ)

*جو جواب آپ کا وہی ہمارا*

پوسٹ کو تعصبانہ ذھن سے بٹ کر پڑھیں

بھوپال اجتماع کی طرح خود اہلحدیث، سلفی یا دیوبندی کہنے، سیرت کانفرنس، شہید کانفرنس، مولوی کانفرنس، یوم تاسیس، اہلحدیث کانفرنس، دیوبند کانفرنس، جشن دیوبند، دستار بندی، تراویح میں ختم قرآن کے دن جلسہ یا تقریر، محراب، گنبد، مینار، مدرسہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ وغیرہ کا بھی کوئی ثبوت اور ذکر نہیں ملا….

تو جان لیجیے کہ تکلیف میلاد النبی کانفرنس سے نہیں بلکہ فسادی بدعتی نجدی مولوی کے کہنے پر نبی کریم علیہ الصلوۃ والسلام کی شان و عظمت سننے ماننے سے تکلیف ہے…ورنہ باقی چیزوں کے نہ عنوان دیکھے نہ کوئی ذکر سنا پڑھا مگر بدعت یاد نہیں آئی…

واہرے منافقین تمہیں تمہارا دھرم کا بھرم تیرے سامنے ہے۔

پڑھ لو،شاید تمہاری بندعقل کھل جائے اور ہدایت پاکر

توبہ کرکے سنی صحیح العقیدہ مسلمان بن جاؤ۔