کمزور کیا کرے

اصناف انسانی مرد و عورت میں فطری اور طبعی طور پر عورت نہایت ضعیف اور کمزور ہے ،لاغر اور نحیف کو خوشگوار زندگی جینی ہو تو اسے دوسرے کے احسان اور کرم فرمائیوں کی اشد ضرورت ہوتی ہے،اسے اپنی زندگی کے تمام تر شعبوں میں راحت اور چین پانے کے لئے دوسرے کے سہارے کی حاجت امر لابدی ہے،جب دوسرے کی حاجت ہے تو وہ دوسرا اسکے حق میں کرم فرما کب ہو سکتا ہے؟ یہ جاننا بھی بہت ضروری ہے،اپنی طرف سے کوئی قربانی نہ ہو تو دوسرے کے احسان کی امید قوی نہیں ہو سکتی ہے،دنیا کا دستور ہے کہ تم احسان کروگے تو کوئی تم پر احسان کرے گا،تم کسی کے کام آؤگے تو کوئی تمہارے کام آئے گا