گھر کو جنت کون بنائے

ہر ایک کی یہ شان نہیں کہ گھر کے باغ کو دنیا میں مثالی جنت بنا دے،جو اپنے آپ کو جنتی عورت نبی کے فرمان کے مطابق بنائے وہی اس کام کو انجام دے سکتی ہے،فرمانے رسول سے ہٹ کر دنیا میں گھر جنت کا باغ بن جائے یہ قبول ہی نہیں کیا جاسکتا ،آج ہر گھرمیں بد حالی کا رونا رویا جارہا ہے نہ شوہر بیوی سے خوش ہے نہ بیوی شوہر سے خوش ہے،وجہ صرف یہ ہے کہ اسلام کی تعلیمات کو درمیان میں نہیں لایا جا رہا ہے اور اپنی من مانی باتوں پر سنسار کی بنیاد رکھے ہوئے ہیں،اپنی بات خود کو پسند آئے لیکن دوسرے کو پسند آنا ضروری نہیں جب کہ اللہ اور رسول کے فرمان میں یہ بات نہیں،ایمان والا عمل کرے نہ کرے مگر اس کے خلاف نہیں بول سکتا ہے،اس لئے مسلمان اپنے معاشرہ میں سکون و اطمینان اللہ اور رسول کے فرمان ہی سے لاسکتا ہے،اگر ایسی بات نہ تھی تو اللہ نے یہ مسائل ہم پر کیوں نہ چھوڑ دئے؟ اس کے لئے نبی کو کیوں مبعوث کیا ؟ نبی نے یہ کیوں فرمایا بعثت لاتمم مکارم الاخلاق میں مبعوث کیا گیا تاکہ حسن اخلاق کو درجۂ ا تمام تک پہنچا دوں

گھر بنے گاضرور مثالی جنت ۔ باغناں بنو تعلیم نبی سے