پوری رات قیام کا ثواب

حضرت عثمان رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ ﷺ فرماتے ہیں کہ جس نے عشاء کی نماز باجماعت پڑھی گویا آدھی رات قیام کیا۔ اور جس نے فجر کی نماز با جماعت پڑھی گویا اس نے پوری رات قیام کیا ۔ (مسلم شریف)

نیز نبیٔ کریم ﷺ ارشاد فرماتے ہیں کہ بے شک آدمی جب امام کے ساتھ نماز پڑھ کر لوٹتا ہے تو اس کے لئے پوری رات کی عبادت کا ثواب لکھ دیا جاتا ہے ۔ (الجامع الصغیر )

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! ہرشخص کے لئے پوری رات عبادت میں گزارنا بہت ہی مشکل ہے ۔ لیکن آقائے کائنات ﷺ کا کرم دیکھئے کہ کمزور امت کی کمزوری پر کرم کی نظر فرما کر شب بھر عبادت کے ثواب سے مالا مال کرنے کے لئے ارشاد فرمایا : عشاء اور فجر کی نماز جس نے جماعت کے ساتھ ادا کی اسے اللہ پوری شب عبادت کا ثواب عطا فرمائے گا ۔ آج یہی دو نمازیں مسلمانوں پربھاری نظر آتی ہیں۔جماعت تو بہت دور کی بات ہے ادا کرنے ہی سے غافل نظر آتے ہیں ۔ جانتے ہیں کہ آقائے کون و مکاںﷺ نے ارشاد فرمایا : کہ فجر اور عشاء کی نماز منافق پر بھاری ہیں مسلمان پر نہیں ۔ لہٰذا ہم فجر اور عشاء کی نماز با جماعت ادا کر کے رات بھر عبادت کا ثواب حاصل کریں ۔ اور اپنا شمار غلامان رسول ﷺ میں کرائیں ۔ اللہ ہم کو نماز با جماعت کی ادائیگی کی توفیق مرحمت فرمائے ۔آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ والتسلیم۔