جاہل مدرس نہیں ہوتا

نرے جاہل شخص کو اسکول مدرسہ اور کسی بھی تربیتگاہ کا معلم تسلیم نہیں کیا جا سکتا اور وہ خود بھی اس منصب کو اپنی جہالت کے باوجود قبولنے کی کوشش نہیں کرتا،کیونکہ اس میں استعداد و صلاحیت نہیں ہے،بالفرض ایسے شخص کو مدرس بنا کر رکھ لیا جائے تو لوگ ذمہ دا ر ا کو کوسیںگے،اور وہ خود اس منصب کو سنبھال لے تو لوگ اسے تنقیدکا نشانہ بنائیں گے،جب دنیا کی درسگاہوں کا یہ ضابطہ ہے تو پھر اس ضابطہ کو شادی خانہ آبادی میں کیوں بھولا دیا گیا ہے؟