فتح کیسے شروع ہوتی ہے؟

ایک دفعہ ایک عظیم خان اونچی جگہ چڑھا اور دوسری طرف سے دشمن کی آتی ہوئی فوج کو دیکھ رہا تھا، دشمن کی فوج اتنی بڑی تھی کہ خان کی فوج اس کے سامنے چیونٹی لگ رہی تھی۔

وزیروں سے سوچا کہ خان ہتھیار ڈال دے گا۔

انہوں نے پوچھا: خان آپ کیا سوچ رہے ہیں۔

خان نے دشمن کی فوج کی طرف دیکھا اور کہا: میں اتنے زیادہ دشمنوں کو کہاں دفناوں گا۔

——

ارطغرل سیریز کے اس کلپ میں کافروں کی جانب سے مسلمانوں پر ظلم و بربیت و پسپائی کا حل موجود ہے۔

ہمت، جرات، بہادری اور جذبہ جہاد مسلمانوں کا زیور ہے، ہم نے جب سے بزدل بن کر جینا شروع کیا ہے کافروں نے چاروں طرف سے گھیر کر مارا ہے۔

اپنے چھوٹے چھوٹے ملکی خطوں کیلئے نہیں مسلم امہ کے لئے جینا سیکھو، بزدلوں کی طرح نہیں خدا کے شیر بن کر کافروں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈالنا سیکھو۔

یقین جانو توحید کی امانت تمہارے سینوں میں ہے تمہیں کوئی زیر نہیں کرسکتا۔

وَأَنْتُمُ الْأَعْلَوْنَ إِنْ كُنْتُمْ مُؤْمِنِينَ

تم ہی غالب آؤگے اگر ایمان رکھتے ہو۔ (آل عمران: 139)

خود کو اسلام کی حمایت و نصرت میں متحرک رکھو اور اپنی نسل کو اسی جذبے سے سرشار کر جاؤ اس نیت کے ساتھ کہ یہ جذبہ نسل در نسل منتقل ہو اور امام مہدی کے اعلی سپاہیوں میں تمہاری نسل شامل ہو۔

ابو محمد عارفین القادری

10 جنوری 2019