حضرت معاذ بن انس رضی للہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ظلم ہے پوراظلم اور کفرو نفاق ہے کہ اللہ کے منادی کو اذان کہتے سنے اور حاضرنہ ہو۔ اور ایک دوسری حدیث پاک میں ہے کہ حضور ﷺ نے فرمایا: ’’مومن کو بدبختی اور نامرادی کے لئے یہی کافی ہے کہ موذن کو تکبیر کہتے سنے اور جماعت میں حاضر نہ ہو‘‘ ۔

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو !ان دونوں احادیث سے پتہ چلا کہ نماز کیلئے مسجد نہ جانا مومن کا شیوہ نہیں ہے بلکہ جو بلا عذر گھر میں نمازپڑھے تو ایسا شخص ظلم ،کفر ، نفاق میں مبتلا ہے ۔ لہٰذا ،خدارا! جماعت ترک کرنے سے باز آجائواور آج ہی اللہ  کہ بارگاہ میں سچے دل سے تو بہ کرلو وہ رحیم وکریم دہمارے گناہوں کو معاف فرمادے گا۔پرورگار عالم ہم تمام مسلمانوں کونمازجماعت کے ساتھ پڑھنے کی توفیق عطا فرمائے ۔آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ والتسلیم۔۔