۲۶۔ عن أبی ہریرۃ رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال : قال رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم : ید اللہ ملأیٰ لاَ تَغِیْظُہَا نَفْقَۃُ سَخَائِ اللَّیلِ وَ النَّہارِ۔ أفَرأیتُم مَا أنْفَقَ مُنْذُ خَلقَ السَّمائَ وَ الأرْضَ فَإنہٗ لَم یَغِضْ مَا فِی یَدِہٖ وَ کَانَ عَرْشُہٗ علی الْمَائِ وَ بِیَدِہٖ الْمِیزَانُ یَخفِضُ وَ یَرْفَعُ ۔ صفائح اللجین ص ۱۷

حضرت ابوہریرہ ضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا : اللہ تعالیٰ کا ہاتھ غنی ہے ۔ اس کے رات دن خرچ کرنے سے بھی خالی نہیں ہوتا فرمایا : کیا تم نہیں دیکھتے؟ جب سے زمین اور آسمان کی پیدائش ہوئی اس وقت سے کتنا اس نے لوگوں کو دیا لیکن اسکے خزانوں میں کوئی کمی نہیں آئی،اور اس وقت اسکا عرش پانی پر تھا ، اور میزان یعنی قدرت اسی کو حاصل ہے جس کو چاہے گرائے اور جسکو چاہے اٹھائے ۔ ۱۲م

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۶۔ الجامع الصحیح للبخاری، التفسیر، ۲/۶۷۷ ٭ الصحیح لمسلم ، الزکوۃ، ۱/۳۲۲

الجامع للترمذی،التفسیر ، ۲/۱۳۰ ٭ الترغیب و الترہیب للمنذری، ، ۲/۴۸