سب سے پہلے نماز کا حساب ہوگا

حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی ہے کہ سرکار دوعالم ﷺ نے ارشاد فرمایا:’’ اََوَََََّلُ مَایُحَاسَبُ بِہٖ الْعَبْدُ الصَّلٰوۃُ‘‘ یعنی سب سے پہلی چیز جس کا بندے سے سوال ہوگا وہ نماز ہے۔ ( طبرانی اوسط )

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! ربِّ قدیر ہی ہمیں رزق دیتا ہے۔ اسی نے ہمیں زندگی عطافرمایااور اسی نے ہم کو دن اور رات میں پانچ مرتبہ نماز کی ادائیگی کا حکم دیا۔ اب اگر بندہ اس کا رزق کھا کر اس کی عطاکردہ زندگی سے بھر پور لطف اندوز ہوکر بھی اس کی بارگا ہ میں سرنہ جھکائے تو کتنا بڑا احسان فراموش ہوگا۔ اس لئے یاد دلائی جارہی ہے کہ قیامت میں سب سے پہلے نماز ہی کا حساب ہوگا لہٰذا ہم سب کو نماز کی پابندی کرنی چاہئے تاکہ کل بروز قیامت شرمندگی سے بچ سکیں اوراللہ کی بارگاہ میں سرخروئی حاصل ہو سکے۔ اللہ اپنے پیارے حبیباکے صدقہ و طفیل ہم سب کا حساب آسان فرمائے۔

حضرت عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ ر سول اللہﷺ نے ارشاد فرمایا : ’’اَلصَّلٰوۃُ عِمَادُ الدِّیْنِ فَمَنْ تَرَکَھَا فَقَدْ ھَدَمَ الدِّیْنَ ‘‘ نماز دین کا ستون ہے، جس نے اس کو ترک کیااس نے دین کو مسمار کیا۔ ( بیہقی )

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! آج ہم اپنے گھروں میں دیکھتے ہیں کہ بچے اگر کسی قیمتی چیز کو گرادیں تو ہم ان پر برہم ہوجاتے ہیں اور زدوکوب کرتے ہیں۔ ہماری کوئی قیمتی چیز بچہ توڑ دے یا کسی سے ٹوٹ جائے تو ہم کنٹرول سے باہر ہوجاتے ہیں۔ بھلابتائیے دین سے قیمتی چیز کیا ہوگی ؟ آج گھر کا ہر فرد الاماشاء اللہ! دن اور رات میں پانچ مرتبہ دین کو مِسمار کرتاہے لیکن ہم اس پر برہم نہیں ہوتے کیونکہ خود ہم بھی اس جرم میں مبتلا ہوتے ہیں۔

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! حضوررحمت عالم ﷺ نے نماز کو دین کا ستون قرار دیا اور تارکینِ نماز کو دین ڈھانے والا فرمایا کوئی مسلمان کبھی یہ نہیں چاہے گا کہ اس کی ذات سے دین ڈھانے کا جرم سرزد ہو لہٰذا نماز کی پابندی کر کے دین کو قائم کرنے کی کوشش کرو۔ آئیے اللہ کی بارگا ہ میں دعا کریں کہ رب قدیر ہم سب کو نماز قائم کرنے والوں میں بنائے۔ آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ والتسلیم۔