اعمال مردود ہوجائیں گے

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے منقول ہے کہ حضورﷺ نے ارشادفرمایا : قیامت کے دن بندے کے اعمال میں سب سے پہلے نماز دیکھی جائے گی اگر وہ پوری ہوئی تو اس کی نماز اور اس کے تمام اعمال قبو ل کر لئے جائیں گے اور اگر وہ ناقص ہوئی تو اس کی نماز اور اس کے سارے اعمال رد کر دئے جائیں گے۔

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو ! مذکورہ حدیث شریف سے نماز کی اہمیت کا اندازہ ہوتا ہے آج ہمارا حال یہ ہے کہ بہت سارے نفلی اعمال میں ہم بہت ہی چستی کا مظاہرہ کرتے ہیں مگر نماز کے معاملہ میں بے پناہ سستی کرتے ہیں کبھی وقت گزار کر ادا کرنا، کبھی لاغر و ناتواں کی طرح ادا کرنا، کبھی نماز میں ادھر ادھر دیکھنا، کبھی اتنی جلدی پڑھنا کہ اللہ کی پناہ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

میرے پیارے آقاﷺ کے پیارے دیوانو! یاد رکھو قیامت میں سب سے پہلے نماز کا معاملہ پیش ہوگا اور اس کی درستگی پر دوسرے اعمال مولیٰ تعالیٰ قبول فرمائے گا لہٰذا ہم کو چاہئے کہ نماز اچھی طرح سے ادا کریں تاکہ قیامت کے دن نماز کی درستگی کی وجہ سے اللہ دیگر اعمال بھی قبول فرمالے۔ اللہ دہم سب کو صحیح طور پر نماز کی ادائیگی کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوۃ و التسلیم۔