نماز چھوڑنے والوں کے لئے عَلم (وادی) ہے

حدیث مبارکہ میں ہے کہ حضورﷺ نے ارشاد فرمایا قیامت کے دن سب سے پہلے نماز نہ پڑھنے والوں کے منہ کالے کئے جائیں گے اور جہنم میں ایک وادی ہے جسے علم کہا جاتا ہے جس میں سانپ رہتے ہیں ہر سانپ اونٹ کی طرح موٹا ہوتا ہے اور ایک ماہ کے سفر کے برابر لمبا ہوتا ہے وہ بے نمازی کو ڈسے گا اور اس کے جسم میں ستر سال تک اس کا زہر جوش مارتا رہے گا پھر اس کا گوشت گل جائے گا۔ (مکاشفۃ القلوب )

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! آج ہم معمولی مچھر کے کاٹنے کو برداشت نہیں کر سکتے نیز اس کی تکالیف سے ہم پریشان ہو جاتے ہیں، تو غور کریں کہ ترک صلوٰۃ کے عوض میں سانپ کے کاٹنے کا عذاب ہوگا تو کون برداشت کر سکے گا لیکن ہمارا حال یہ ہے کہ ہم حضورا کو تو مانتے ہیں لیکن حضور اکی باتیں نہیں مانتے کتنا احسان فرمایا ہے تاجدار کائنات ﷺ نے کہ قیامت کے ہولناک عذاب سے آگاہ فرما دیا ورنہ کیسے پتہ چلتا کہ کس گناہ کی کیا سزا ہے۔ اب جب سرکارا نے فرما دیا کہ نماز چھوڑنے کی سزا یہ بھی ہو گی کہ سانپ ڈنک مارے گا اور سانپ کتنا بھیانک ہو گا وہ بھی بتا دیا تو ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم اپنے آپ کو نماز کا پابند بنا کر سانپ وغیرہ کے عذاب سے محفوظ کر لیں۔ اللہ اپنے پیارے محبوب ﷺ کے صدقہ و طفیل ہم سب کو نماز کا پابند بنائے۔ آمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْکَرِیْمِ عَلَیْہِ اَفْضَلُ الصَّلٰوۃِ وَ التَّسْلِیْمِ