یاایھا الٹھرّک، مُلاّ غرّق و قومہ علینا ٹرّک ٹرّک

😷😷😷

رَفض کے نرالے رنگ

تاویلات نہکیجئے

تقریباً تین ماہ سے یہ دونوں ویڈیوز↓↓ میرے پاس موجود تھیں مگر میں نے انہیں اپلوڈ نہ کیا

کل جب ایک لڑکی سے طارق جمیل کی لائیو گفتگو شیئر کی تو ↑↑ طارق جمیل کے ہم مکتب چاہنے والوں نے طرح طرح کی تاویلیں کیں

ایک صاحب کہنے لگے کہ یہ تبلیغ کا طریقہ ہے اور دینِ اسلام کی محبت میں ایسا کیا گیا جبکہ طارق جمیل کے مطابق وہ اس لڑکی سے راجپوت ہونے کے سبب بات کررہے ہیں کیونکہ موصوف بھی پرتھوی راج چوہان کی اولاد میں سے ہیں

ایک صاحب نے یہ پھینکی کہ لائیو گفتگو میں ضروری نہیں کہ لڑکی کا چہرہ دیکھا ہو جبکہ ان دونوں ویڈیوز میں سے ایک میں طارق جمیل نے خود لڑکی کو سامنے بلا کر سوال کرنے کو کہا

ان ویڈیوز میں طارق جمیل نے نمستے بھی کہا

لڑکی شلپا راجپوت ہے اور یہی سبب بنی کہ سب کو چھوڑ کر طارق جمیل اس سے بات کررہے ہیں

المختصر یہ کہ جتنے لوگوں نے تاویلات کی تھیں ان سب کی تاویلات کا خاتمہ ان دو ویڈیوز سے ہوجاتا ہے اسکے علاوہ نہ جانے کتنی ویڈیوز موجود ہونگی

مفتی عبدالقوی بھی وفاق المدارس کا ہی تھا

ہم یہ نہیں کہتے کہ ایسے تنظیم المدارس وغیرہ سے دوسرے مولوی ہو نہیں سکتے لیکن اتنا ضرور کہتے ہیں کہ ایسی حرکات کرنے والا جو بھی ہوگا اس کا رد کرنا ضروری ہے کہ یہ فعل خلافِ شرع ہے

اگر طارق جمیل کو تبلیغ ہی کرنی تھی تو اپنی بیوی عائشہ سے کہہ دیتے کہ وہ انہیں تبلیغ کردے

عائشہ صاحبہ بیوٹی پالرز میں تو بہت چکر لگاتی رہتی ہیں پھر اس لڑکی شلپا راجپوت سے اپنی راجپوتانہ باتیں کر لیتی

یار میں زیادہ کچھ اس لئے نہیں کہتا کہ میرا مقصد طارق جمیل کے دیوبندی ہونے یا رَفض نواز ہونے پر نزلہ نکالنا نہیں بلکہ ایک آئینہ دکھانا مقصود ہے تاکہ اسکے سحر میں گرفتار لوگوں کو شریعت کا مذاق بنوانے والے طارق جمیل کا اصل چہرہ نظر آئے

یہ جلوت کا عالَم ہے، خدا جانے خلوت کا عالَم کیا ہوگا