أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَاِذَاۤ اُنۡزِلَتۡ سُوۡرَةٌ اَنۡ اٰمِنُوۡا بِاللّٰهِ وَجَاهِدُوۡا مَعَ رَسُوۡلِهِ اسۡتَـاۡذَنَكَ اُولُوا الطَّوۡلِ مِنۡهُمۡ وَقَالُوۡا ذَرۡنَا نَكُنۡ مَّعَ الۡقٰعِدِيۡنَ ۞

ترجمہ:

اور جب کوئی سورت نازل کی جاتی ہے کہ تم اللہ پر ایمان لائو اور اس کے رسول کے ساتھ جہاد کرو تو ان میں سے متمول لوگ آپ سے اجازت مانگنے لگتے ہیں، اور کہتے ہیں ہم کو چھوڑ دیجئے ہم بیٹھنے والوں کے ساتھ رہ جائیں

تفسیر:

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے : اور جب کوئی سورت نازل کی جاتی ہے کہ تم اللہ پر ایمان لائو اور اس کے رسول کے ساتھ جہاد کرو تو ان میں سے متمول لوگ آپ سے اجازت مانگنے لگتے ہیں اور کہتے ہیں ہم کو چھوڑ دیجئے، ہم بیٹھنے والوں کے ساتھ رہ جائیں (التوبہ : ٨٦)

اس آیت کا مضمون التوبہ : ٨٣ میں گزر چکا ہے۔ اور اللہ پر ایمان لائو کا معنی ہے اللہ پر ایمان کو برقرار رکھو۔

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 9 التوبة آیت نمبر 86