(۵) حضور آسان دین لائے

۳۹۔ عن جابربن عبد اللہ رضی اللہ تعالیٰ عنہما قال:قال رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم :بُعِثْتُ بِالْحَنِیْفِیَّۃِ السَّمْحَۃِ، وَ مَنْ خَالَفَ سُنَّتِیْ فَلَیْسَ مِنِّی ۔ فتاوی رضویہ۲/۱۴۲

حضرت جابر بن عبد اللہ رضی اللہ تعالیٰ عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا :مجھے نرمی والا دین لیکر مبعوث کیا گیا ،تو جس نے میری سنت کی مخالفت کی وہ مجھ سے نہیں ۔ ۱۲م

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۳۹۔ المسند لاحمد بن حنبل ، ۵/۲۶۶ ٭ الطبقات الکبری لابن سعد، ۱/۱۲۸

التفسیر للقرطبی، ۱۹/ ۳۹ ٭ الاتحافات السنیۃ، ۹/۱۸۴

التفسیر لابن کثیر ، ۱/۳۱۲ ٭ تاریخ بغداد للخطیب، ۷/۲۰۹

کشف الخفاء للعجلونی، ۱/۲۵۱ ٭ تلبیس ابلیس لابن الجوزی، ۲۸۹