حدیث نمبر 95

روایت ہے حضرت براء سے فرماتے ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا رکوع اورآپ کا سجدہ اور دو سجدوں کے درمیان نشست اور جب رکوع سےسر اٹھاتےسواءقیام اوربیٹھنے کے قریبًا برابرتھا ۱؎(مسلم،بخاری)

شرح

۱؎ یعنی قیام تو تلاوت کی وجہ سے اورقعود التحیات،درودوں،دعاؤں کی وجہ سے دراز ہوتےتھے۔ ان کےسوا باقی ارکان رکوع،سجدہ وغیرہ برابر ہوتے تھے نہ بہت دراز نہ بہت مختصر بلکہ درمیانے،یہ عام نمازوں کا ذکرہے۔سورج گرہن کی نماز میں رکوع سجدہ قیام کے برابرتھے۔