(۸)اسلام غالب رہتا ہے

۲ ۴۔ عن عائذ بن عمر المزنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال: قال رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم: ألاِسْلَامُ یَعْلُو وَ لا یُعْلیٰ ۔ فتاوی رضویہ ۵/۵۹۶

حضرت عائذ بن عمرو مزنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا : اسلام غالب رہتا ہے مغلوب نہیں ہوتا ۔

 

]۲[ امام احمد رضا محدث بریلوی قدس سرہ فرماتے ہیں

تکفیر اہل قبلہ و اصحاب کلمہ طیبہ میں جرأت و جسارت محض جہالت بلکہ سخت آفت جس میں وبال عظیم و نکال کا صریح اندیشہ ۔و العیاذ باللہ رب العالمین ۔ فرض قطعی ہے کہ اہل کلمہ کے قول و فعل کو اگر چہ بظاہر کیساہی شنیع وفضیح ہو حتی الامکان کفر سے بچائیں ، اگر کوئی ضعیف سی ضعیف ،نحیف سی نحیف تاویل پیدا ہو جسکی رو سے حکم اسلام نکل سکتا ہو تو اسی کی طرف جائیں اور اسکے سوا اگر ہزار احتمال جانب کفر جاتے ہوں خیا ل میں نہ لائیں ۔احتمال اسلام چھوڑکر احتمالات کفر کی جانب جانے والے اسلام کو مغلوب اور کفر کوغالب

کرتے ہیں ۔ والعیاذ باللہ رب العالمین ۔ فتاوی رضویہ ۵/۵۹۶

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۴۲۔ السنن للدار قطنی، ۲/۳۹۵ ٭ السنن الکبری للبیہقی، ۶/۲۰۵

فتح الباری للعسقلانی، ۳/۲۱۸ ٭ نصب الرایۃ للزیلعی، ۳/۲۱۲

تاریخ اصفہان لابی نعیم، ۳/۲۱۸ ٭ تلخیص الحبیر للعسقلانی، ۴/۱۲۶

کشف الخفاء للعجلونی، ۱/۱۴۰ ٭ الجامع الصغیر للسیوطی، ۱/۱۸۳