أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

اَلَّا تَعۡبُدُوۡۤا اِلَّا اللّٰهَ‌ ؕ اِنَّنِىۡ لَـكُمۡ مِّنۡهُ نَذِيۡرٌ وَّبَشِيۡرٌ ۞

ترجمہ:

(ان کی تفصیل کردی گئی ہے کہ تم اللہ کے سوا کسی کی عبادت نہ کرو بیشک میں تم کو اس کی طرف سے (عذاب سے) ڈرانے والا اور (ثواب کی) خوشخبری دینے والا ہوں

تفسیر:

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے : کہ تم اللہ کے سوا کسی کی عبادت نہ کرو بیشک میں تم کو اس کی طرف سے (عذاب سے) ڈرانے والا اور (ثواب کی) خوشخبری دینے والا ہوں۔ (ھود : ٢) 

اس کا ایک معنی یہ ہے کہ یہ کتاب ہے جس کی آیتیں مستحکم کردی گئی ہیں پھر ان آیتوں کی تفصیل کردی گئی ہے تاکہ تم صرف اللہ کی عبادت کرو اس لحاظ سے اس کتاب کو نازل کرنے کا مقصد اصلی یہ ہے کہ بندے اللہ کی عبادت کریں اور جس نے اللہ کی عبادت نہیں کی وہ ناکام اور نامراد ہے۔ اس کا دوسر امعنی یہ ہے کہ اس کتاب کی آیات مستحکم کی گئی تاکہ نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) لوگوں کو یہ حکم دیں کہ وہ اللہ کے سوا کسی کی عبادت نہ کریں اور لوگوں سے یہ کہیں کہ میں اللہ کے عذاب سے ڈرانے والا اور اللہ کے اجر وثواب کی خوشخبری دینے والا ہوں۔

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 11 هود آیت نمبر 2